شہنشاہ جذبات محمد علی کو مداحوں سے بچھڑے14 برس بیت گئے

MA

کراچی : پاکستان  فلم  انڈسٹری کےمعروف  اداکاراور شہنشاہ  جذبات  محمد  علی  کو  مداحوں   سے بچھڑے 14برس بیت گئے ہیں ۔

 پاکستان  فلم  انڈسٹری کے  سنہرے  دور کی جب  بھی  تاریخ  لکھی جائے گی توجاندار  اداکاری  اور ڈائیلاگ کی ادائیگی میں مہارت رکھنے والے محمد  علی کا نام  سرفہرست ہوگا ۔

اپنی منفرد آواز اور لب و لہجے اور حقییقی  ادکاری سے انھوں نے  مداحوں  کے   دلوں میں  وہ مقام  بنایا  جو بہت کم فنکاروں کو  نصیب  ہو تا ہے ۔

محمد علی نے اپنے کیرئیر کے دوران 300 کے لگ بھگ فلموں میں کام کیا۔ انکی مشہور فلموں میں جاگ اٹھا انسان، آئینہ، محل، دل اور دنیا، سبق، تیرے میرے سپنے، بہن بھائی، انتخاب، آواز،شامل ہیں ۔

 محمد علی نےپاکستان فلم انڈسٹری کی تمام نامور اداکاروں کے ساتھ کام کیا لیکن اداکارہ زیبا کے ساتھ انکی جوڑی شائقین  فلم کو بے حد پسند آئی  اور  سلور  اسکرین  پر  دھوم مچانے  والی  یہ جوڑی 1966میں  شادی کے بندھن میں  بندھ گئی ۔

اداکارمحمد علی نے اپنے کیریئرکا آغاز حیدرآباد میں ریڈیو پاکستان سے کیا اور  جلد ہی اپنی آواز  اور پر  وقار شخصیت کے کے بل بوتے پر  سلور اسکرین پر پہنچ گئے۔انھوں نے  1962 میں اپنے فلمی کیریئر کا آغاز فلم چراغ جلتا رہا’ سے کیا۔

ہر  کردار میں  حقیقت کے  رنگ  بھرنے  والے  محمد  علی1931کو  رام  پور  انڈیا میں  پیدا ہوئے ۔

وہ 19 مارچ 2006 میں اچانک دل کا دورہ پڑنے پر اس  دیار فانی  سے  کوچ کر گئے انہیں لاہور میں میاں میر دربار کے قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا۔

 

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay