بانی پیپلزپارٹی ذوالفقار علی بھٹو کی 41 ویں برسی

روٹی ، کپڑا اور مکان کا نعرہ دینے والے اور پیپلزپارٹی کی بنیاد رکھنے والے ذوالفقار علی بھٹو کی 41ویں  برسی آج منائی جارہی ہے۔

پاکستان کے نویں  اور پہلے منتخب وزیر اعظم اور  پاکستانی سیاست میں ایک نئی روح پھونکنے والے ذوالفقار علی بھٹو 5 جنوری 1928 کو لاڑکانہ میں  پیدا ہوئے  اور کیلیفورنیا اور  آکسفور ڈ  سے  قانون کی  تعلیم حا صل کی ۔

1963   میں ذوالفقارعلی بھٹو جنرل ایوب خان کی کابینہ میں وزیر خارجہ  بنے تاہم  بعد میں سیاسی اختلافات پر حکومت سے الگ ہوگئے۔

تیس نومبر 1967کو بھٹو نے پاکستان  پیپلز پارٹی کی بنیاد رکھی کے1970 الیکشن میں ذوالفقار علی بھٹو نے روٹی،کپڑا اور مکان کا نعرہ لگایا اور قائد  عوام بن گئے۔

انتخابات میں کامیابی کے  بعد  جب بھٹو  برسر   اقتدار آئے تو  اس وقت  ملک دولخت ہو چکا تھا، جس کی وجہ سے وہ سویلین مارشل لاء ایڈمنسٹریٹر اور پھر 1971 سے 1973 تک پاکستان کے صدر رہے جبکہ 1973 سے 1977 تک وہ منتخب وزيراعظم رہے۔

ان کے اہم اور بڑے کارناموں میں ملک کو متفقہ آئین دینا ، بھارت سے شملہ معاہدہ کرکے پائیدار امن کی بنیاد رکھنا  وغیرہ  شامل ہیں  ۔

ذوالفقار علی بھٹو کے 1965ء کی جنگ کے دوران اقوام متحدہ میں کہے گئے تاریخی الفاظ کہ ’’ہم ایک ہزار سال تک بھارت کے ساتھ جنگ جاری رکھیں گے‘‘آج بھی پاکستانیوں کے ذہنوں میں گونج رہے ہیں۔

1965ء کی جنگ کے بعد ذوالفقار علی بھٹو صرف پاکستان میں ہی نہیں، بلکہ پاکستان کے باہر بھی اس قدر مقبول ہوگئے کہ جس کا تصور بھی ان دنوں ممکن نہیں تھا۔ ذوالفقار علی بھٹو کا کہنا تھا کہ1965ء کی جنگ ایک ایسا سنہری موقع تھا کہ جس سے فائدہ اٹھا کر کشمیر کے ایک بڑے حصے کو آزاد کرایا جاسکتا تھا۔

بھٹو کے دور میں پسماندہ   طبقات کے حقوق کے لیے کئی اقدامات کیےگئے لیکن  مبینہ داخلی اور خارجی سازشوں کے نتیجے میں جنرل ضیاء الحق نے منتخب حکومت کا تختہ الٹا اور قتل کے الزام ميں مقدمہ چلا کر 4 اپریل 1979 کو انہیں تختہ دار پر لٹکا دیا گیا۔

ذوالفقار علی بھٹو کے بعد ان کی سیاسی فکر، فلسفے، نظریات اور سیاسی ورثے کو ان کی بیٹی بینظیر بھٹو نے آگے بڑھایا ۔

ذوالفقار علی بھٹو   کی یہ  نڈر ،بہادر  اور  دلیر  صاحبزادی  محترمہ بینظیر بھٹو دو مرتبہ ملک کی وزیراعظم بھی منتخب ہوئیں، انہیں عالم اسلام کی پہلی خاتون وزیراعظم ہونے کا اعزاز بھی نصیب ہوا،بینظیر بھٹو  27 دسمبر 2007ء کو لیاقت باغ راولپنڈی میں انتخابی مہم کے دوران  بم دھماکے میں شہید ہوگئیں اور ان کی شہادت کے بعد اب بلاول بھٹو زرداری نے اب پاکستان پیپلز پارٹی کی باک ڈور سنبھال لی ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay