میری جگہ والدحلقےسےالیکشن میں حصہ لیں گے : دانیال عزیز

اسلام آباد : توہین عدالت کے مرتکب قرار دیے گئے سابق وفاقی وزیر دانیال عزیز کا کہنا ہے کہ تھا اور میری جگہ اب والد انتخاب لڑیں گے۔

 اسلام  آباد میں میڈیا  سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ آج توہین عدالت کیس کافیصلہ سنایاگیا،میرےخلاف3چارجزتھے،کچھ8ماہ اورکچھ ایک سال پرانےتھے۔

دانیال عزیز  نے کہاکہ میرےخلاف ایک چارج تھاپریس کانفرنس میں تضحیک کا،واحدگواہ نےاعتراف کیامیں نےتوہین عدالت نہیں کی،نجی چینل پرمیراویڈیوکپ نشرکیاگیا،عدالت سےدرخواست کی ویڈیوکلپ کاٹرانسکرپٹ دیاجائے۔

دانیال عزیز  نے مزید کہاکہ نجی چینل پرچلائی گئی ویڈیومیں میری گفتگوسنسرکی گئی،ویڈیومیں جوگفتگوکی گئی تھی وہ پرائیویٹ تقریب میں کی تھی۔

انھوں نے مزید کہاکہ تیسراچارج تھامیں نےعمران خان کےفیصلےکےبعدگفتگوکی،میں نےجاویدہاشمی کےانکشاف کاذکرکیاتھاجاویدہاشمی نےکہاتھاکسی اورطریقےسےلوگوں کوہٹایاجائےگا۔

                دانیال عزیز  نے کہاکہ فیصلےپرعدالت میں لوگوں نےکہایوسف رضاگیلانی جیساکیس ہے،آصف زرداری کوسزاہوئی توصدربن گئے،یوسف رضاگیلانی کوسزاہوئی تووہ وزیراعظم بن گئے،ہم نےریڈزون پرحملہ نہیں کیا،عدالت کی توہین نہیں کی،تفصیلی فیصلہ آنےکےبعدقانونی مشاورت کریں گے،میری جگہ والدحلقےسےالیکشن میں حصہ لیں گے۔

دانیال عزیز نے مزید کہا کہ اداروں کو مضبوط کرنے کی تگ و دو کی ہے، عدالتی فیصلہ پڑھ کر قانونی طور پر پیش رفت کریں گے۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے دانیال عزیز کے خلاف 3 مئی کو محفوظ کردہ توہین عدالت کا فیصلہ سناتے ہیں انہیں مختصر سزا دی جس کے بعد وہ آئندہ انتخابات میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

دانیال عزیز قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 77 نارووال ون سے (ن) لیگ کے ٹکٹ پر انتخابات میں حصہ لے رہے تھے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay