میں جیل جانے کے لیے بھی تیار ہوں، مریم نواز

لندن: پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز کا کہنا ہے کہ میں جیل جانے کے لیے بھی تیار ہوں۔

پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز کا لندن میں ہارلے اسٹریٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ والدہ کی صحت یابی کے بعد وطن واپس آئیں گے اور 100 کے قریب پیشیاں بھگتیں، اب بھی پاکستان واپس جائیں گے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ آخری گیند اور آخری لمحے تک مقابلہ کرنا چاہیے اور میں جیل جانے کے لیے بھی تیار ہوں۔ جیل جانے میں ڈرنے کی کوئی بات نہیں ہے اور الیکشن میں ڈٹ کر مقابلہ کرنا چاہیے۔

پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز کا کہنا تھا کہ 70سال کے دوران کسی نے یہ لڑائی نہیں لڑی ہے اور اس لڑائی کی قیمت ہمیں ادا کرنی پڑی تو کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس طرح لڑائی کی سب کے سامنے ہے، کچھ کہنے کی ضرورت نہیں ہے اور یقین ہے آخری فتح مسلم لیگ ن کی ہوگی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز احتساب  عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔ احتساب عدالت کا کہنا تھا کہ فیصلہ 6 جولائی کو سنایا جائیگا۔

نواز شریف ، مریم نواز اور کیپٹن (ر)صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ محفوظ کرلیا گیا تھا جو کہ 6 جولائی کو سنایا جائیگا۔ ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ مریم نواز کے وکیل کے حتمی دلائل مکمل ہونے پر محفوظ کیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ احتساب عدالت  میں تقریباً ساڑھے 9 ماہ  ایون فیلڈ ریفرنس کیس کی سماعت ہوئی ہے، جس میں نواز شریف ، مریم نواز ، حسن اور حسین نواز کیپٹن (ر) صفدر ملزم نامزد ہیں جبکہ حسن نواز اور حسین نواز کو ایون فیلڈ ریفرنس میں اشتہاری قرار دیا جاچکا ہے۔

ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف سمیت  دیگر ملزمان سے 127سوالات پوچھے گئے، ملزمان کی طرف سے کوئی گواہ عدالت میں پیش نہیں کیا گیا، لندن سے 2 گواہوں کے بیانات ویڈیو لنک پر ریکارڈ کیے گئے جبکہ نیب کے گواہ رابرٹ ریڈلے اور راجا اختر کا ویڈیو لنک پر بیان ریکارڈ کیا گیا۔

ایون فیلڈ ریفرنس کی 107 سماعتیں ہوئیں، نواز شریف اور مریم نواز 78 مرتبہ عدالت میں پیش ہوئے

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay