چور دروازے سے حکومت میں آنے والے ملک کی خدمت نہیں کرسکتے، شاہد خاقان

لاہور: سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ چور دروازے سے حکومت میں آنے والے ملک کی خدمت نہیں کرسکتے ہیں۔

سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے جاری کردہ بیان کے مطابق ملک کو ایٹمی قوت بنانے والے کیخلاف ناقابل قبول فیصلہ آیا ہے اور کیا اس بار بھی عدالت میں انصاف ہوا ہے۔ آج بات ایسے فیصلےکی ہے جسے تاریخ قبول نہیں کرے گی۔

شاہد خاقان کا کہنا تھا کہ ہم نے کبھی نہیں کہا کہ ہمیں عدالت سے کوئی فائدہ چاہیے اور پاکستان کےعوام اس فیصلے کو نہیں مانتے ہیں۔ عمران خان اب 25 جولائی کا انتظار کرو اور ن لیگ کے ووٹر 25 جولائی کو اس فیصلے کا جواب دیں گے۔

سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ 2000 میں بھی عمر قید سنائی، جسے قوم نے قبول نہیں کیا تھا اور پاکستان کا الیکشن متنازع ہو چکا ہے۔ انصاف نہ صرف ہونا بلکہ نظر بھی آنا چاہیے اور جس بندے سے ایک ارب برآمد ہوئے اس کی تین پیشیاں ہئیں۔

شاہد خاقان کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے پہلے بھی جیل بھگتی اب بھی بھگت لیں گے اور نواز شریف جیل جانے سے ڈرتے نہیں ہیں۔ جس نے الیکشن ملتوی کرنے کی کوشش کی اس پر آرٹیکل 6 لگائیں گے۔

سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا مزید کہنا تھا کہ چور دروازے سے حکومت میں آنے والے ملک کی خدمت نہیں کرسکتے ہیں اور ن لیگ کی انتخابی مہم متاثر کرنے کےلیے فیصلہ کیا گیا ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay