ایرانی وزیرخارجہ کی وزیراعظم، آرمی چیف اور ہم منصب سے ملاقات

اسلام آباد: پاکستان کے دو روزہ دورے پر آئے ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے وزیر اعظم عمران خان ، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور ہم منصب شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی اور پاک ایران تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے حوالے سے بات چیت کی۔

ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف گزشتہ روز پاکستان کے دو روزہ مختصر دورے پر اسلام آباد پہنچے تھے۔ انہوں نے نومنتخب وزیر اعظم عمران خان سے پرائم منسٹر ہاوس میں ملاقات کی اور ایرانی صدر کا خیرسگالی کا پیغام پہنچایا۔

اس موقع پر جواد ظریف نے عمران خان کو ایشیائی تعاون ڈائیلاگ سربراہ اجلاس میں شرکت کی دعوت جو اکتوبر میں ہو رہا ہے۔ عمران خان نے ایران کے سپریم لیڈر کی طرف سے مسئلہ کشمیر کی حمایت پر شکریہ ادا کیا اور ایران کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کو مزید فروغ دیا۔

وزیراعظم عمران خان نے خطے میں امن واستحکام کی بحالی پر زور دیا اور خطے کی ترقی اور خوشحالی کے لیے دوطرفہ تعاون کلیدی ہے۔ انہوں کہا کہ اسلام کو مخالف سرگرمیوں کی روک تھام کے لیے متحدہ ہونا ہوگا۔

ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف کا کہنا تھا کہ خواہش ہے پاکستان ترقی وخوشحالی کی جانب گامزن رہے۔

دوسری جانب ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف شاہ محمود قریشی سے ملاقات کے لئے دفترخارجہ پہنچے جہاں  وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے وفد کا استقبال کیا۔ ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان ہمارا خاص ہمسایہ ملک ہے اور ایران پاکستان کے ساتھ کام کرکے بہت خوش ہے۔

ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کے مابین باہمی اور کثیر القومی تعاون موجود ہے اور خطے کی سیکیورٹی اور امن کے لیے مل کر کام کریں گے۔

اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ایران اور پاکستان ہمسایہ ملک ہیں، ہمارے چیلنجز مشترکہ ہیں اور آگے بڑھنے کے لیے خیالات کا تبادلہ اہم ہے۔ نئی حکومت کے بعد جواد ظریف دورہ کرنے والے پہلے وزیر خارجہ ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ملاقات میں مسائل کے حل کے لیے بات چیت ہوئی ہے اور ملاقات کا مقصد صرف امن، استحکام اور خوشحالی ہے۔

قبل ازیں پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے مطابق ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے جی ایچ کیو کا دورہ کیا۔ وہاں انہوں نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی، ملاقات میں علاقائی سیکیورٹی اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔

اس موقع پر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ پاکستان خطے میں سیکیورٹی وامن کے لیے سنجیدہ کوششیں کر رہا ہے۔ جس پر ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کا کہنا تھا کہ خطے میں امن واستحکام کے لیے پاکستان کا کردار قابل قدر ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay