معروف نعت خواں اور مبلغ جنید جمشید کی آج 53 ویں سالگرہ منائی جا رہی ہے

Junaid-Jamshed

دل دل پاکستان جیسے شہر آفاق گانے سے لوگوں کے دلوں میں جگہ بنانے والے  معروف نعت خواں اور مبلغ جنید جمشید کی آج 53 ویں سالگرہ منائی جارہی ہے ۔

حمد باری تعالی ہو یا نعت رسولﷺ ،ملی نغمہ ہو یا منققبت ان کا کلام ہر جگہ لا ثی رہا ۔بین الاقوامی شہرت یافتہ مشہور مذہبی مبلغ، مسحو رکن آواز کے مالک، نعت خواں اور مذہبی پروگراموں کےمیزبان جنید جمشید 3 ستمبر 1964 کو کراچی میں پیدا ہوئے ۔

موسیقی سے بے حد لگاؤ رکھنے والے جنید جمشید نے زمانہ طالبِ علمی میں ہی گلوکاری کا آغاز کر دیا تھا 1987میں وائٹل سائنز گروپ وجود میں آیا اور14 اگست 1987میں وہ شہر آفاق ملی نغمہ بنا جو پاکستان میں دوسرے قومی ترانے کا درجہ رکھتا ہے ۔

” دل دل پاکستان جان جان پاکستان ” یہ وہ ملی نغمہ ہے جو ہرپاکستانی کے دل کی آواز اور دھڑکن ہے جذبہ حب الوطنی سے سرشار یہ نغمہ بچوں اور بڑوں دونوں میں یکساں مقبول ہے ۔

نید جمشید کے مشہور نغمات میں گورے رنگ کا زمانہ ، سانولی سلونی سی محبوبہ ، آنکھوں نے آنکھوں کو جو سپنا ، نہ تو آئے گی نہ ہی چین آئے گا، اعتبار، وہ کون تھی ، تم مل گئے ، ہم ہیں پاکستانی ہم تو جیتیں گے وغیرہ وغیرہ جیسے بے شمار نغمات شامل ہیں ۔ جنید جمشید نے وائٹل سائنز کے ساتھ 4اسٹوڈیو البم کی کامیابی کے بعد اپنے سلو کر ئیر میں بھی خوب کامیابی حاصل کی ۔

2004 میں جنید جمشیدنے باضابطہ طور پر موسیقی کی دنیا کو خیرباد کہہ کر دین کی تبلیغ درس تدریس حمد اور نعت خوانی سے رشتہ جوڑ لیا “میرا دل بدل دے” ، “دنیا کے ائے مسافر”، “محمد کا روضہ “، “اے نبی پیارے نبی اور” الہی تیری چوکھٹ پر”، ان کی مشہور نعتوں میں سے ہیں ۔

7 دسمبر 2016 کی شام حویلیاں کے مقام پر فضائی حادثے میں جنید جمشید خالقِ حقیقی سے جا ملے ۔
جنید جمشید کی حادثاتی موت پر ہر آنکھ اشکبار تھی اور ہر دل اداس . جنید جمشید آج ہم میں نہیں مگر ان کی آواز آج بھی لوگوں کے کانوں میں گونجتی اور دلوں کو گرماتی ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay