عاطف اسلم کی آواز میں ‘چلتے چلتے’ کے ریمیک پر لتا منگیشکر برہم

Atif Aslam Lata Mangeshkar

اس میں کوئی دورائے نہیں کہ عاطف اسلم ایک باصلاحیت اور معروف گلوکار ہیں ان کا منفرد انداز گائیکی اور سروں سے کھیلنے کا نرالہ ڈھنگ ان کو باقی گلوکاروں سے الگ اور فلموں کے لیے ہداتیکاروں اور فنکاروں کی اولین ترجی بناتا ہے ۔

مگر حال ہی میں ان کی گائیکی سے بھارت کی لیجنڈری گلوکارہ لتا منگیشکر ناراض ہو گئی ہیں ،جی ہاں معروف گلوکار عاطف اسلم نے بالی وڈ فلم ’مترون‘ کے لیےفلم پاکیزہ کےلیے لتا منگیشکر کے گانے چلتے چلتے‘ کا ریمیک گایا ہے جس پر انھوں نے ا ظہار برہمی کرتے ہوئے کہاہے کہ کے اصل شاعر اور کمپوزرز نے اسے تیار کیا ہے، کسی کو اجازت نہیں کہ اسے تبدیل کریں، کیا محنت کی کوئی قیمت نہیں؟

بھارتی گلوکارہ کا کہنا تھا کہ آج کل کلاسک گانوں کے ریمیک کا جو ٹرینڈ چل نکلا ہے یہ انتہائی افسوس ناک ہے، کیا گانوں کو بنانے کی صلاحیت یہ ہے کہ پرانے کلاسک گانوں کی موسیقی نقل کی جائے اور ان کی اصل شاعری میں ردو بدل کرکے انہیں پیش کیا جائے۔

خیال رہے کہ 1972 میں ریلیز ہونے والی فلم پاکیزہ کے لیے یہ گانا یونہی کوئی مل گیا تھا سرراہ چلتے چلتے لتا منگیشکر نے اپنی سریلی اور سحر انگیز آواز میں گایا تھا اور اب اسے فلم مترون کے لیے ریمیک کیا گیا ہے جیسے عاطف اسلم نے گایا ہے ۔

واضح رہے کہ 1972 میں مینا کماری کی پاکیزہ فلم کا یہ گالا لتا منگیشکر نے گایا تھا جس کو کیفی اعظمیٰ نے لکھا تھا اور موسیقار غلام محمد تھے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay