بابراعوان نے مشیرپارلیمانی امور کےعہدے سے استعفیٰ دے دیا

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان کے مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے احتساب عدالت میں نیب ریفرنس دائر ہونے کے بعد عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

بابر اعوان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ قانون کی حکمرانی مجھ سے شروع ہونی چاہیے اور میں اپنے خلاف نیب ریفرنس دائر ہونے کے بعد وزیراعظم کے قوم سے کیے گئے وعدے پر استعفیٰ دے رہاہوں۔

نیب نے احتساب عدالت میں وزیر اعظم عمران خان کے مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان ، سابق وزیراعظم راجہ پرویزاشرف، وزارت قانون کےسابق سیکریٹریزمسعودچشتی،ریاض کیانی، سابق کنسلٹنٹ شمیلہ محمود،سابق جوائنٹ سیکریٹری ریاض اور وزارت پانی وبجلی کےسابق سیکریٹری شاہدرفیع کے خلاف ریفرنس دائر کیا ہے۔

بابر اعوان کا کہنا تھا کہ 2007 میں نندی پور پاورپروجیکٹ آیا اور یہ منصوبہ 2012 میں منظورہوا۔

انہوں نے کہا کہ میں نے استعفیٰ  نیب ریفرنس میں لگائے گئے  بے بنیاد الزامات کوغلط ثابت کرنے کے لیے دیا ہے۔ مجھ پرریفرنس میں تاخیر کا الزام  ہے جس کی بناء پر میرا عہدے پر رہنامناسب نہیں ہے۔

نیب ریفرنس میں کہا گیا ہے کہ مذکورہ افراد کی غفلت کے باعث نندی پورمنصوبے میں تاخیرہوئی اور پاورپلانٹ کی تنصیب میں تاخیرسے قومی خزانے کو27 ارب کانقصان پہنچا۔

ریفرنس میں کہا گیا ہے کہ نندی پور معاہدے کیلئے وزارت پانی وبجلی نے وزارت قانون سے رائے مانگی اور وزارت قانون نے وزارت پانی وبجلی کورائے دینے میں 2سال لگادیے ۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay