وزیر اعظم کی بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سے ڈیم فنڈ میں رقوم جمع کرانے کی درخواست

IMRAN-KHAN

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سے ڈیم فنڈ میں رقوم جمع کرانے کی درخواست کردی۔

وزیر اعظم کا قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پاکستان کے پاس صرف30 دن کیلئے پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہے اور پانی کو ذخیرہ کرنے کے لیے ڈیم بنانے کی اشد ضرورت ہے ۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ میں نے وعدہ کیاتھاسارےمعاملات قوم کےسامنےلاؤں گا ۔ پاکستان کا قرضہ پہلے 6 ہزارارب روپے تھا اور  اب آج 30ہزارارب تک پہنچ چکاہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سب سے بڑا مسئلہ پانی کا ہے اور ملک میں صرف30 دن کیلئے پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہے میں چیف جسٹس ثاقب نثار کو داد دیتاہوں کہ انھوں نے یہ مسئلہ اٹھا حالاں کہ پانی کامسئلہ چیف جسٹس کانہیں سیاستدانوں کاتھا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ڈیم نہ بنائےتواناج اگانےکے لیے بھی پانی نہیں ہوگا۔ ہمیں ڈیم بنانے کےلیے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی مدد درکارہے۔ انہوں نے درخواست کی کہ پاکستانی، دنیابھرسے ڈیم فنڈمیں عطیات جمع کرایں ۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میں آج بیرون ملک رہنے والے پاکستانیوں سے خاص طورپرمخاطب ہوں اور میں چیف جسٹس کےساتھ ساتھ وزیر اعظم  فنڈ کے قیام کابھی اعلان کرتاہوں کیوں اگر ہم نے ڈیمز نہ بنائے تو 2025 میں پاکستان خوشک سالی کا شکار ہوجائے گا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ اس وقت ہرپاکستانی کےحصے میں ایک کیوبک لیٹرپانی رہ گیاہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بیرون ملک بسے پاکستانی ایک ہزارڈالربھی ڈیم فنڈ میں عطیہ دیں تومعاملہ حل ہوجائے گا۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ میں قوم کےپیسوں کی حفاظت کروں گا۔ سمندرپارپاکستانی بھرپورکرداراداکریں تو 5 سال میں ڈیم بناسکتے ہیں۔ سمندر پار پاکستانیوں سےاپیل ہے کہ ڈیم فنڈمیں پیسہ بھیجیں ۔ انہوں نے اپنی بات دہراتے ہوئے کہا کہ امریکااوریورپ میں مقیم پاکستانی ایک ہزارڈالریااس سےزائدڈیم فنڈمیں بھیجیں۔ ہمیں کسی سے قرضہ لینے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay