بیگم کلثوم نواز لندن میں انتقال کر گئیں، نمازجنازہ جمعرات کو ادا کی جائے گی

kulsoom

لندن: سابق وزیراعظم نوازشریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز لندن کے ہارلے اسٹریٹ کلینک میں دوران علاج انتقال کر گئیں۔ نماز جنازہ جمعرات کے روز لندن میں ادا کی جائے گی، جس کے بعد جسد خاکی پاکستان روانہ کیا جائے گا۔ 

اسپتال زرائع کے مطابق کل رات بیگم کلثوم نواز کی صحت مزیدخراب ہوگئی تھی جس کے باعث انھیں پھر وینٹی لیٹر پر منتقل کر دیا گیا تھا۔

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے بیگم کلثوم نواز کے انتقال کی تصدیق کر دی ہے اور کہا ہے کہ ان کی میت پاکستان لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

سابق وزیر اعظم نواز شریف کی اہلیہ طویل علالت کے بعد منگل کے روز لندن میں انتقال کرگئیں۔ اس بات کی تصدیق مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کی۔

ذرائع کے مطابق بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ جمعرات کے روز ریجنٹ پارک مسجد لندن میں بعد نماز ظہر ادا کی جائے گی۔ جس  کے بعد جسد خاکی ہیتھروایئرپورٹ کے ذریعے پاکستان روانہ گیا جائے گا۔ جہاں جاتی عمرہ میں انکی تدفین کی جائے گی۔

وزیراعظم عمران خان نے دفترخارجہ  کو شریف خاندان کے ساتھ تعاون کی ہدایت دی ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ کلثوم نواز ایک بہادر خاتون تھی۔ جنھوں نے بیماری کا بہادری سے مقابلہ کیا۔ خدا انکے درجات کو بلند کریں آمین۔

وزیراطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر   کی پے رول پر رہائی پر کوئی اعتراض نہیں ہے۔

             میری بھابھی اور میاں نواز شریف صاحب کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز اب ہم میں نہیں رہیں، اللہ تعالٰی انکی مغفرت فرمائے۔

پاکستانی ہائی کمیشن کاعملہ ہارلےاسٹریٹ  کلینک پہنچ گیا

بیگم کلثوم نواز کے  انتقال کے  بعد پاکستان ہائی کمیشن کے ہیڈ آف چانسلری آصف خان اسپتال پہنچ گئے ۔

ترجمان پاکستانی ہائی کمیشن لندن کا کہنا ہے کہ  شریف فیملی سےمکمل رابطے میں ہیں وزارت خارجہ سےاحکامات ملتے  ہی عملہ اسپتال پہنچا۔

پاکستانی ہائی کمیشن  نے مزید بتایا ہے کہ میت پاکستان بھجوانےکےلیےقانونی تقاضےپورےکریں گے ۔

بیگم کلثوم نوازکالندن کےمقامی وقت کےمطابق صبح10بجےاتتقال ہوااور ان کے صاحبزادےحسن اورحسین نوازہارلےاسٹریٹ کلینک میں موجود ہیں ۔

بیگم کلثوم نواز

بیگم کلثوم نواز1950میں لاہورمیں پیداہوئیں 1971میں نوازشریف کےساتھ رشتہ ازدواج سےمنسلک ہوئیں ۔

انھوں نے1972میں بی اےکی ڈگری حاصل کی بیگم کلثوم نوازکو3بارخاتون اول رہنےکااعزازحاصل رہا ۔بیگم کلثوم نواز1999سے2002تک مسلم لیگ ن کی صدررہیں ۔این اے120سےنوازشریف کی نااہلی کےبعدضمنی انتخاب لڑا ۔

17اگست2017کوگلےکےکینسرکےعلاج کیلئےلندن گئیں  جہاں ان کی  3سرجریاں ہوئیں ۔

وزیراعظم عمران خان کی تعزیت

وزیراعظم عمران خان نے بیگم کلثوم نواز کی وفات پر تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے پاکستانی ہائی کمیشن کو غمزدہ خاندان کو ہر ممکن معاونت کی ہدایت کی ہے۔

آرمی چیف کابیگم کلثوم نوازکےانتقال پراظہارافسوس،آئی ایس پی آر

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بیگم کلثوم نوازکےانتقال پراظہارافسوس کرتے ہوئے کہا ہے کہ  اللہ تعالیٰ کلثوم نوازکوجنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطافرمائے ۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay