پاکستان ہمیشہ سعودی عرب کےشانہ بشانہ کھڑا ہے

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے سعودی ٹی وی کو انٹر ویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان مسلم دنیا میں تنازعات ختم کرنا چاہتا ہے اور ہر مشکل وقت میں سعودی عرب کے شانہ بشانہ کھڑا ہے۔   

وزیراعظم عمران خان نے سعودی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہ کہا کہ کامیابی انسان نہیں اللہ کےہاتھ میں ہے،انسان صرف کوشش کرسکتاہے۔ پاکستان درست سمت میں نہیں جارہاتھا۔ ہم نئےنظریےکےساتھ آگےآئےہیں۔ تحریک انصاف کا مقصد پاکستانی قوم کی سوچ بدلناہےاور ملک کے کمزور طبقے کو اٹھانا چاہتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت اداروں کومضبوط بناناچاہتےہیں۔ ادارے مضبوط ہوں گے توملک ترقی کرےگا۔ مغربی ممالک میں ترقی کارازان کےمضبوط ادارےہیں۔

وزیراعظم  نے کہا کہ بیرونی دوروں سے پہلے اپنے اندرونی معاملات ٹھیک کرناچاہتے ہیں جبکہ پاکستان کو فلاحی ریاست بنانے کے خواہاں ہیں۔ حکومت عمارتوں پرنہیں،عوام پرپیسہ لگاناچاہتےہیں۔پاکستان 15سال سےدہشت گردی کاشکاررہاہے اور اس جنگ میں بھاری نقصان اٹھا چکا ہے۔

اپنے انٹرویو میں وزیراعظم نے کہا کہ پاکستانی قوم سعودی عرب کےلیےخیرسگالی کےجذبات رکھتی ہے جبکہ ہمیشہ ملک کی منتخب قیادت سب سے پہلے سعودیہ کادورہ کرتی رہی ہے۔

انھوں نے کہا کہ جب بھی مشکل وقت آیا سعودی عرب نے پاکستان کاساتھ  دیا اورہمیشہ سعودی عرب کےشانہ بشانہ کھڑارےگا۔

پڑوسی ممالک سے تعلقات پروزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان سب سے زیادہ انسانی ودیگروسائل رکھنےوالاملک ہے۔ہم بھارت اورافغانستان سے پرامن تعلقات چاہتے ہیں۔ بھارت اورافغانستان سے سمیت ایران کے ساتھ بھی اچھےتعلقات چاہتے ہیں۔ افغان امن سے پاکستان کاعلاقائی کردارمزید فعال ہوجائے گا کیونکہ میرا یقین ہے کہ ہرتنازع کاایک سیاسی حل ہوتاہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان قدرتی وسائل سے مالا مال ہے ملک ہےجو ہرقسم کی پھل اورسبزیاں پیداکرنے صلاحیت رکھتا ہے۔ یہاں پرکوئلے تانبے سمیت سونے کی کانیں بھی موجود ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ ملک سامراجی دورسے بری طرح متاثرہوا ہے۔مسلم برادری کااتحاد وقت کاتقاضہ ہےجبکہ پاکستان میں سرمایہ کاری کے بے پناہ مواقع ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ہمیں معاشی ترقی کےلیے نظام بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔ سی پیک اتحادی ملکوں کے لیے پاکستان میں سرمایہ کاری کا بہترین منصوبہ ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay