برٹش ایئرویزکا10سال بعدپاکستان سےپروازیں بحال کرنےکافیصلہ

اسلام آباد : برٹش ایئرویز نے 10سال بعد پاکستان سے پروازیں بحال کرنے کا فیصلہ کرلیا۔ برٹش ایئرویزکافلائٹ آپریشن  2008 سے معطل تھا۔

برٹش ایئرویز کے نمائندوں نے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سمندر پار پاکستانی زلفی بخاری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ اگلےسال جون سےفلائٹ آپریشن کاآغازہوگا۔برٹش ایئرویز اسلام آباد سے ہیتھرو کے لیے فلائٹ آپریٹ کرے گی۔

نمائندہ برٹش ایئرویز کے مطابق ایک ہفتےکےدوران3فلائٹس چلائی جائیں گی،پروازیں ہیتھروایئرپورٹ سےچلائی جائیں گی۔ دوطرفہ ٹکٹ499برطانوی پاؤنڈمیں دستیاب ہوگی، تھری کلاس787ڈریم لائن طیارےاستعمال کیےجائیں گے۔

اس موقع پر برطانوی سفارتی حکام کا کہنا تھا کہ پاکستان میں ماحول بہتر ہونے پر برطانیہ نے پروازوں کا فیصلہ کیا ہے، پاکستان میں معیشت بہتری کی جانب گامزن ہے۔

پریس کانفرنس کے دوران وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سمندر پار پاکستانی زلفی بخاری کا کہنا تھا کہ پروازیں بحال کرنےپربرٹش ایئرویزکےشکرگزراہیں،ہم پاکستان کادنیابھرسےرابطہ چاہتےہیں۔

واضح رہے کہ 2008 میں اسلام آباد کے میرٹ ہوٹل میں بم دھماکے کے بعد برٹش ایئرویز نے پاکستان میں فلائٹ آپریشن معطل کردیا تھا۔

فلائٹ آپریشن بحال کرنےپربرٹش ایئرویزکاشکریہ،ڈی جی آئی ایس پی آر

دوسری جانب پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر نے فلائٹ آپریشن بحلا کرنے پر برٹش ایئرویز کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں امن واستحکام آرہاہے، قوم،سیکیورٹی فورسزکی دہائیوں پرمبنی جدوجہدرنگ لانےلگی۔

برٹش ایئرویز کے پہلے طیارے کی آمد کا منتظر رہوں گا: برطانوی ہائی کمشنر

برطانوی ہائی کمشنرتھامس ڈریو نے بھی ٹوئٹر پیغام دیتے ہوئے کہا کہ برٹش ایئرویزپاکستان میں دوبارہ پروازیں شروع کررہی ہے، پروازیں اگلےسال جون سےشروع ہوجائیں گی،پروازیں اسلام آباداورلندن کےدرمیان براہ راست چلیں گی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اور برطانیہ کے درمیان ڈائریکٹ لنک کھلنے سے یہ بات واضح ہے کہ پاکستان میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہوگئی ہے اور دونوں ممالک کے درمیان تعلیم و تجارت کا دائرہ وسیع ہورہا ہے۔

برطانوی ہائی کمشنر نے کہا کہ اقدام سےدونوں ممالک کےتجارتی تعلقات مزیدمضبوط ہوں گے، میں جون 2019 میں برٹش ایئرویز کے پہلے طیارے کی آمد کا منتظر رہوں گا۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay