27اور28 دسمبرکواسلام آبادمیں سفراء کانفرنس ہوگی، شاہ محمودقریشی

ملتان: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ رواں ماہ 27 اور 28 تاریخ کو اسلام آباد میں سفراء کانفرنس منعقد ہوگی جس میں غیر ملکی مندوبین شرکت کریں گے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا ملتان میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کل علاقائی ممالک کے دوروں پرروانہ ہورہاہوں ۔ انہوں نے کہا کہ علاقائی ممالک سے بہترتعلقات خارجہ پالیسی کاحصہ ہے اور ہم خطے میں امن واستحکام کےخواہاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 27اور28 دسمبرکواسلام آبادمیں سفراء کانفرنس ہوگی جس میں  وزیراعظم عمران خان بھی کانفرنس میں شرکت کریں گے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ خوشی ہے کہ نوجوان اور تعلیم یافتہ لوگ پی ٹی آئی میں شامل ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ غیرملکی سرمایہ کاری سے روزگارمیں اضافہ ہوتاہے اور غیرملکی سرمایہ کاری سےکرنسی مستحکم ہوتی ہے جب کہ ماضی کی حکومتیں غیرملکی سرمایہ کاری لانےمیں ناکام رہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ غیرملکی سرمایہ کاروں کوپاکستان کی طرف راغب کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ نوازشریف سےمتعلق ریفرنسز کے متوقع فیصلے پررائے نہیں دے سکتا ہوں۔  آزاد عدلیہ نوازشریف سے متعلق ریفرنسزپرآزادی سےفیصلہ کرے گی۔ نوازشریف کیخلاف کیسزپی ٹی آئی حکومت نےنہیں بنائے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ جنوبی پنجاب صوبہ بنانے کیلئے آئین میں ترمیم ضروری ہے۔ جنوبی پنجاب کی قرارداد کی باتیں ہوتی ہیں ساتھ نہیں دیاجاتا اور دوسری طرف جنوبی پنجاب صوبے سے متعلق دراڑیں ڈال جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب صوبے کے معاملے کو سیاسی مصلحت کے تحت الجھایا جاتاہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھاکہ بہاولپور،ڈی جی خان اور ملتان کے مسائل ایک جیسے ہیں۔  انہوں نے کہا کہ کل میں افغانستان جارہاہوں پھرایران جاؤں گا۔ ایران کے بعد چین اورروس بھی جاؤں گا ، یہ4ملکوں کاسفر2دنوں میں کروں گا ۔ اس دورے کا مقصد ان ممالک کی لیڈرشپ سے رابطہ کرنا ہے اور یہی منشورکاحصہ ہے۔ اگرامن استحکام ہوگاتویہ خطہ آگےبڑھےگا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ہتھیارجنگ کی بجائے تعلیم پرخرچ ہوں گے تو ترقی ہوگی، تحریک انصاف اپنے منشورکے مطابق کام کررہی ہے۔ کوئی کسی کاغلام نہیں ہوسکتاملتان کا تو تخت ہے ہی نہیں۔ بہاولپورکاکوئی مسئلہ آتاہے ہم ان کےساتھ ہوں گے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay