نیب نےآغاسراج درانی کواسلام آبادسےگرفتارکرلیا

agha-siraj-durrani

قومی احتساب بیورو (نیب) نے سندھ اسمبلی کے اسپیکر آغا سراج درانی کو اسلام آباد سے گرفتار کر لیا۔

ذرائع کے مطابق آغا پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سراج درانی کے خلاف زائد اثاثوں اور سرکاری فنڈز میں خورد برد کا کیس ہے۔ آغا سراج درانی کو اسلام آباد کے فائیو اسٹار ہوٹل سے گرفتار کیا گیا ہے، نیب کی جانب سے آغا سراج درانی کی گرفتاری کی تصدیق بھی کردی گئی ہے۔

نیب اعلامیہ

نیب کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق آغا سراج درانی کو نیب کراچی نے نیب راولپنڈی اورنیب ہیڈکوارٹرز انٹیلی جنس ونگ کی معاونت سےگرفتارکیاگیا، آغاسراج درانی کوکل احتساب عدالت میں پیش کیاجائےگا، ملزم پرآمدن سے زائد اثاثے بنانے کا الزام ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب کراچی نےآغاسراج کوکئی مرتبہ طلب کیالیکن وہ پیش نہیں ہوئے، جس کے بعد نیب ٹیم نےآغاسراج درانی کی گرفتاری کیلئےچیئرمین نیب سے ہدایت لی تھی۔

آغا سراج درانی کا3 روزہ راہداری ریمانڈ منظور

احتساب عدالت میں جج محمد بشیر کے سامنے سندھ اسمبلی کے اسپیکر آغا سراج درانی کو پیش کیا گیا جہاں قومی احتساب ادارے کی جانب سے آغا سراج درانی کیلئے 7 روزہ راہداری ریمانڈ کی استدعا کی۔

بعدازاں عدالت نے نیب کی جانب سے 7 روز کے راہداری ریمانڈ کی استدعا مسترد کرتے ہوئے تین روز کا راہداری ریمانڈ منظور کرلیا اور آج ہی ملزم کا طبی معائنے کرانے کا بھی حکم دیا۔

احتساب عدالت نے ملزم کو تین روز میں کراچی کی متعلقہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

یاد رہے اپریل 2018 میں چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج کے خلاف تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ آغا سراج درانی کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کی چھان بین ہوگی۔

سابق اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے خلاف تین انکوائریز کا حکم دیا گیا تھا، جن میں آمدن سے زائد اثاثوں، غیر قانونی بھرتیوں اور ایم پی اے ہاسٹل، سندھ اسمبلی بلڈنگ کی تعمیر میں کرپشن شامل ہیں۔

مزید پڑھیے : نیب کا اسپیکر سندھ اسمبلی کیخلاف شکایت کی جانچ پڑتال کاحکم

جولائی 2018کو ڈی جی نیب کراچی کی زیر صدارت نیب کے ریجنل بورڈ کا اجلاس منعقد ہوا جس میں قومی احتساب بیورو (نیب ) نے میئر کراچی وسیم اختر اور سابق اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کیخلاف تحقیقات کا فیصلہ کیا تھا ۔

مزید پڑھیے : نیب کا وسیم اختر اور آغا سراج درانی کیخلاف کرپشن الزامات کی تحقیقات کا فیصلہ

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay