ڈرہے پاکستانی کرنسی سے قائداعظم کی تصویر نہ ہٹادیں، خورشید شاہ

سکھر : پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماء خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ ہمارےحکمران کشکول اٹھاکرگھومتےہیں،حکمران قرضہ لیتےوقت شرماتےنہیں مسکراتےہیں۔

سکھرمیں پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماء خورشید شاہ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان لوگوں نے ملک کومقروض بنادیا، یہ جمہوری نہیں آمرانہ حکومت ہے، پی ٹی آئی حکومت ملک میں مہنگائی کاطوفان لےکرآئی، مہنگائی کاعذاب ہمارےگلے پڑگیا۔

پی پی رہنماء نے کہا کہ ہمارےحکمران کشکول اٹھاکرگھومتےہیں، حکمران قرضہ لیتےوقت شرماتےنہیں مسکراتےہیں، یہ کہتےتھے مہنگائی کم کریں گے،روزگاردیں گے، کہاں ہیں یہ ساری چیزیں؟۔

خور شید شاہ نے کہا کہ چاہتےہیں نہری نظام سے پینےاورزراعت کیلئے پانی فراہم کریں، پنوعاقل کےایک لاکھ افرادکو پینےکےلیےپانی فراہم کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ذوالفقاربھٹونےایٹم بم بناکرسرحدوں کی حفاظت کااعلان کیاتھا، کوئی دشمن پاکستان کی طرف میلی آنکھ سےنہیں دیکھ سکتا۔ محترمہ بینظیر بھٹو نے پیپلز پارٹی کے لیے نہیں ملک کے لیے قربانی دی، عمران خان تم بینظیر کا نام ہٹانا چاہتے ہو مگر لوگوں کے دلوں سے کیسے نام ہٹاؤ گے، جو تاریخ خون سے لکھی جائے اس کا نام پانی سے نہیں مٹایا جاسکتا۔

انہوں نے کہا کہ اگر آپ ڈکٹیٹر بننا چاہتے ہیں تو صدام حسین کی طرح وردی پہن کر صدر بن جائیں، عمران خان تم اپناکام کرو ہم اپنا کام کریں گے۔ آپ بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سے بینظیر بھٹو کا نام نکالنا چاہتے ہو، اس پر آپ کو شرم آنی چاہیے۔

خورشید شاہ نے کہا میں نہیں مانتا اس وقت پاکستان میں کوئی جمہوریت ہے، کسی کی خواہش پر جمہوریت نہیں چل سکتی۔ڈرہےیہ پاکستانی کرنسی سےقائداعظم کی تصویرنہ ہٹادیں،عمران خان یہ نہ کہہ دیں نئےپاکستان میں نوٹ پرمیری تصویرلگےگی،معیشت تباہ ہورہی ہے ہم کہتےہیں ساتھ بیٹھومگروہ نہیں بیٹھتے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay