حکومت قومی اسمبلی اجلاس فوری بلائے،شاہدخاقان عباسی

Shahid-Khaqan-Abbasi

لاہور : مسلم لیگ ن کے رہنماؤں نے پیٹرولیم منصوعات کی قیمتوں میں اضافے کے معاملے پر قومی اسمبلی کے اجلاس کو فوری بلانے کا مطالبہ کردیا۔

مسلم لیگ ن کے رہنماء اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج شہبازشریف کی صدارت میں میٹنگ ہوئی ،میٹنگ میں فیصلہ ہواحکومت قومی اسمبلی اجلاس فوری بلائے، انتخابات میں دھاندلی سےمتعلق بھی تبادلہ خیال کیاگیا، حکومت پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضوں پربریفنگ دے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ خورشیدشاہ کی سربراہی میں کمیٹی بنائی گئی ہے، نیشنل ایکشن پلان پراپوزیشن کامشترکہ مؤقف ہے ، اقدامات کاجائزہ لینےکےبعد متفقہ رائےاپنائی جائےگی، حکومت نےقومی اسمبلی کومفلوج کردیاہے، قانون میں کسی بھی تبدیلی کیلئےاسمبلی میں بحث ضروری ہے،اپوزیشن وزیراعظم کےاقدامات کاجائزہ لےگی، اقدامات کاجائزہ لینےکےبعد متفقہ رائےاپنائی جائےگی، حکومت قومی اسمبلی میں نیشنل ایکشن پلان پربریفنگ دے۔

ن لیگی رہنماء نے کہا کہ ملک کاوزیراعظم آئین کی خلاف ورزی کررہاہے، فوجی عدالت کےمعاملےپروہی مؤقف ہے جونیپ پرہے، فوجی عدالتوں کاقیام2سال کیلئےتھابعد میں مدت بڑھائی گئی، حکومت سمجھتی ہےفوجی عدالت رہنی چاہیں تواجلاس بلالے، فوجی عدالتوں سےمتعلق پارلیمنٹ کوبتایاجائے، حکومت بتائےفوجی عدالتوں کےقیام میں توسیع کیوں ضروری ہے۔

انکا کہنا تھا کہ وزیراعظم کہتےہیں این آراو نہیں ملےگا ، عمران خان بتائیں کس نےاین آراومانگاہے؟ عمران خان نہ این آراودےسکتےہیں نہ کسی نےمانگاہے، این آر او صرف آمر دےسکتاہے ، حکومت کوخود این آراو کی ضرورت پڑےگی۔

شاہد خاقان عباسی نے کہاکہ معیشت دیوالیہ ہوچکی ہےلیکن یہ 18ویں ترمیم کی وجہ سے نہیں، معیشت18 ویں ترمیم یااین ایف سی کی وجہ سےدیوالیہ نہیں، حکومت این ایف سی میٹنگ بلالے اورمعاملہ حل کردے، امن برقراررکھنےکےلیےجو ہوسکاوہ کریں گے ، کسی ڈیل کےقائل ہیں نہ ہی اس حوالےسےکچھ چاہتےہیں۔

انہوں نے کہا کہ دباؤ کی وجہ سے اسپیکرآج تک کوئی اجلاس نہ چلاسکے، اسپیکرقومی اسمبلی دباؤکی وجہ سےایوان کوچلانہیں سکتے، اسپیکروضاحت کریں کس کادباؤ ہے ؟ اسپیکرقومی اسمبلی کہتےہیں پروڈکشن آرڈرجاری نہیں کرسکتا، اسپیکرقومی اسمبلی ایوان میں کوئی بحث تک نہیں کراسکتے، جب بھی اسپیکرسےبات ہوتی ہےکہتےہیں مجھ پردباؤہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay