نیوز ون کی خصوصی ٹرانسمیشن ‘برکتِ رمضان’ شبیر ابو طالب کے ساتھ

[mashshare]
https://www.youtube.com/watch?v=OHrPLM8Ojb8

حضرت عمرؓ سے روایت ہےرسول اکرمﷺ نے فرمایا نماز باجماعت کا ثواب تنہا پڑھنے کے مقابلے میں ستائیس درجہ زیادہ ہے ۔

نیوز ون کی خصوصی ٹرانسمیشن برکتِ رمضان شبیر ابو طالب کے ساتھ ناظرین کی توجہ کا مرکز بن گئی ہے کیونکہ اس کا ہر سیگمنٹ نہایت معلوماتی اور ناظرین کی دلچسپی کو مدنظر رکھتے ہوئے ترتیب دیا گیا ہے ۔

ہر سیگمنٹ کی تیاری میں ناظرین کی پسند کے ساتھ ساتھ تقدسِ رمضان کا بھی خاص خیال رکھا گیا ہے ۔ نیوز ون کی جانب سےکم وقت میں اسلامی اقدار اور روایات کے حوالے سے مکمل اور جامع معلومات لوگوں تک بہم پہنچانے کی پوری کوشش کی جارہی ہے ۔ یہ ہی وجہ ہے کہ برکتِ رمضان ٹرانسمیشن دن بہ دن اپنے عروج کی جانب گامزن ہے اور دیکھنے والوں میں مقبولیت حاصل کر رہی ہے۔

پڑوسیوں  کے حقوق

اپنے  ابتدائی کلمات میں  پروگرام کے  میزبان  شبیر  ابو طالب  نے پڑوسیوں  کے حقوق کے موضوع پر بات کی  ۔

انسان کا اپنے والدین، اپنی اولاد اور قریبی رشتہ داروں کے علاوہ سب سے زیادہ واسطہ و تعلق بلکہ ہر وقت میل ملاقات، لین دین ہمسایوں اور پڑوسیوں سے بھی ہوتا ہے اور اس کی خوشگواری و ناخوشگواری کا زندگی کے چین وسکون اور اخلاق کے اصلاح و فساد اور بناؤ بگاڑ پر بہت گہرا اثر پڑتا ہے۔

پڑوسیوں سے محبت و تعلقات کی استواری کا بہترین ذریعہ باہم ہدیوں و تحفوں کا لین دین ہے ، سرکارِ دوعالم صلى الله عليه وسلم خود اپنی بیوی کو اس کی تاکید فرمایا کرتے تھے۔ اسی بناء پر ایک مرتبہ حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا نے عرض کیا کہ یا رسول اللہ میرے دو پڑوسی ہیں میں ان میں سے کس کو پہلے یا زیادہ ہدیہ بھیجوں آپ نے فرمایا جس کا دروازہ تمہارے دروازے سے زیادہ قریب ہو۔ (مشکوٰة)

آو بات کریں 

آو بات کریں  سیگمنٹ میں  ہمارا  آج کا موضوع ‘مال کی محبت’  تھا۔ اللہ تعالیٰ نے مال کو انسانوں کے لئے وجہ قیام قرار دیا ہے۔ انسان کی جسمانی ضرورتوں کو پورا کرنے اور جسمانی زندگی کو بقا دینے کے لئے اللہ تعالیٰ نے مال پیدا کیا۔ قرآن مجید میں ارشاد باری تعالیٰ ہے: ’’بے وقوفوں کو اپنے وہ مال نہ دو، جنھیں اللہ رب العزت نے تمہارے قیام کا ذریعہ بنایا ہے‘‘۔ (سورۃ النساء۔۵)

 قصص القرآن

رسولﷺ کا شجرہ نسب : قصص القرآن  میں  ہمارا آج کا موضوع رسولﷺ کا شجرہ نسب تھا۔  جس میں  میزبان بیرسٹر اہتشام امیر الدین نے اسلامی

تاریخ اور واقعات کا ذکر کیا ۔ آج رسولﷺ کے شجرہ نسب کا نقشہ کھنچا۔

احتیاط لازم ہے

آج کے احتیاط لازم  ہے سیگمنٹ میں حکیم رضا الہی  نے  پھوڑے ،پھنسی  اور دانوں  سے  بچاؤ  ،علاج  ،احتیاط اور  پرہیز کے حوالے  سے بات کی ۔

ایک نیکی

رمضان المبارک  ہمیں ایثار  ، قربانی ،انکساری  اور  لوگوں کی  مدد کر نے کا  درس دیتا ہے ۔ نیوز ون بھی  اس کار خیر میں  اپنا  فرض  ادا کر رہا ہے اور  اس ہی  لیے  میں سیگمنٹ  ایک  نیکی  ترتیب  دیا گیا  ہے جس میں روزانہ سماجی  اور معاشرتی  خدمت کرنے  والے  فلاحی اداروں  کے  ری  پریزنڑیٹو  آتے ہیں  ۔

آج  کے ہمارے  ایک  نیکی  سیگمنٹ میں  ہمارے  مہمان  ایل  آر پی ٹی اسپتال  سے  ثاقب حمید  ہمارے  ساتھ  تھے  جنہوں نے  اس کے قیام کی  وجوہات  اور مقاصد  سے آگاہ کیا ۔

مدحت مصطفیٰﷺ

مدحت اسکی ﷺ کیوں نہ کریں ہم مدحت کا حقدار بھی ہے بعد خدا جو ﷺ اپنی حدوں میں مالک بھی مختار بھی ہے۔  آج  بھی مدحت مصطفیٰ میں  دوٹیموں  امام بوصیری  اور شیخ  سعدی   نے  مقابلہ  نعت رسول مقبولﷺ  میں حصہ لیا  ۔ٹیم امام بوصیری  حافظ انیس ،غلام مصطفیٰ اور سید بلال نے منقبت پیس کی  جبکہ  ٹیم شیخ  سعدی  سے جوریہ بتول ،احمد رضا قادری  اور  حسن  قلندری  نے شرکت کی ۔

ٹیم امام بوصیری سے سید بلال  اورشیخ سعدی  سے حسن قلندری  کہ سفر کا اختتام ہوگیا ۔ یاد رہے کہ  اس مقبلے کا  فائنل  27 رمضان المبارک کو ہوگا ۔

بزم علم وعقیدت

بزم علم وعقیدت میں ہمارا  آج کا موضوع ‘مومن کے لیے کامیابی کا  معیار‘  ہے  سید مولانا  مظفر حسین شاہ صاحب نے قرآن  و سنت کی روشنی میں مومن کے لیے کامیابی کامعیار کے حوالے سے گفتگو اور رہنمائی  فرمائی ۔

قرآن مجید میں تدبر اور غور کرنے سے معلوم ہوتا ہے کہ باوجودیہ کہ دنیا اورمتاع دنیا کو الله تعالیٰ نے انسانوں کے لیے پیدا کیا ہے، لیکن اس کی نعمتوں سے حد سے زیادہ لذت حاصل کرنے اوراس میں ضرورت سے زیادہ ترقی حاصل کرنے کوانجام کے اعتبار سے ناپسندیدہ قرار دیا ہے اورمسلمانوں کو خاص طور سے اس میں انہماک سے منع کیا ہے ۔

 دنیا میں ترقی کرنا اور اس کی متاع سے لذت حاصل کرنا غیر مسلموں کا شیوہ او ران کا مقصد ہے۔ حدیث میں آیا ہے ترجمہ : یعنی دنیا مومن کے لیے قید خانہ ہے اورکافر کے لیے جنت ہے۔

 قرآن میں تو یہاں تک فرمایا گیا ہے:”اگر یہ بات نہ ہوتی کہ سب لوگ ایک طریقہ کے ہو جائیں (کافر) تو جو الله کے منکر ہیں ان کے گھروں کی چھت او ران پر چڑھنے کی سیڑھیاں چاندی کی کر دیتے او ران کے گھروں کے دروازے اور وہتخت بھی چاندی کے کر دیتے جن پر تکیہ لگا کر بیٹھتے ہیں اور سونے کے بھی اور یہ کہ یہ سب کچھ دنیا کی زندگی کا سامان ہے اور دار آخرت آپ کے رب کے ہاں پرہیز گاروں کے لیے ہے۔“ ( الزخرف:33 تا35)

افطار مزیدار

آج  کے افطار مزیدار سیگمنٹ میں  شیف معراج نے سبزیوں  کا پلاؤ اور فروٹین  اور اسپرائیٹ کو ملا کر کاک ٹیل بنانا سیکھایا ۔

تند رستی ہزار نعمت ہے‘‘ واقعی اگر انسان صحت مند او ر توانا ہو تو وہ ہر کام با آسانی کر سکتا ہے پھر چاہے وہ کام دین کا ہو یا دنیا کااحسن طریقے سے سرانجام دے سکتا ہے لیکن بشرطیکہ وہ صحت مندہو اور صحت مند رہنے کے لیے متوازن غذا کا استعمال ضروری ہےاور اس ماہ میں کھانے پینے کے اوقات میں تبدیلی آجاتی۔   اس لیے   سحر  اور افطار جتنا  ہلکا ہو گا اتنا ہی معدے کو  ہضم کرنے میں آسانی ہو گی ۔

برکتِ افطار

سورۃ مومن کی  آیت  ۶۰ میں  اللہ  تعالیٰ فرماتا ہے کہ تم مجھے  پکارو میں  تمھاری  دعا قبول کروں  گا  ۔ رسول  اکرم  ﷺ  نے  فرمایا ہےکہ دعا عباد ت کا  مغز ہے۔

افطار کا وقت وہ وقت ہوتا ہے جس وقت ہر دعا  قبول ہوتی ہے۔اس لئے  اپنے  ہاتھوں کو  اٹھائیں  اور مانگ لیں سب کچھ  کیونکہ  اللہ  رب العزت عطا کرنے  والا  مہربان ہے ۔

ڈس کلیمر:
نیوز ون کا یا اس کی پالیسی کا بلاگر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay