ورلڈکپ2019: بھارت نے روایت برقرار رکھتے ہوئے پاکستان کو شکست دے دی

مانچسٹر : ورلڈ کپ 2019 کے اہم ترین میچ میں بھارت نے پاکستان کو 89 رنز سے شکست دے دی۔

عالمی کپ 2019 کا ہائی ولٹیج میچ بھارت اور پاکستان کے درمیان مانچسٹر کے اولڈ ٹریفورڈ گراؤنڈ میں کھیلا گیا جہاں پاکستان نے ٹاس جیت کر بھارت کو پہلے بیٹنگ کرنے کی دعوت دی۔

بھارت کی جانب سے مقررہ پچاس اوورز میں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 336 رنز بنائے اور قومی ٹیم کو جیت کے لیے 337 رنز کا ہدف دیا۔

قومی ٹیم کی جانب سے ہدف کے حصول کے لیے فخر زمان اور امام الحق میدان میں اترے لیکن ٹیم کا مجموعی اسکور صرف 13 رنز تک ہی پہنچا تھا کہ پاکستان کی پہلی وکٹ امام الحق کی صورت میں  گرگئی جو صرف 7 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔

ان کے فخرزمان اور بابر اعظم کی جوڑی 105 رنز کی عمدہ شراکت سے ٹیم کا مجموعی اسکور 117 رنز تک لی گئی ۔ اس موقع پر قومی ٹیم کی دوسری وکٹ بابر اعظم کی گری جو 48 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

ٹیم کا مجموعی اسکور 126 تک پہنچا تو پاکستان کی تیسری وکٹ فخرزمان کی صورت میں گری 62 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔ ان کے بعد محمد حفیظ 9 اور شعیب ملک بغیر کوئی اسکور کیے آؤٹ ہوگئے۔

پاکستان کی 5 وکٹیں گرنے کے بعد قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے ٹیم کا اسکور عماد وسیم کے ساتھ آگے بڑھانے کی کوشش کی لیکن وہ بھی صرف 12 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔

اس موقع پر ایک مرتبہ پھر بارش کے باعث میچ کو کچھ دیر کے لیے روک دیا گیا۔ میچ دوبارہ شروع ہوا تو ڈی ایل میتھڈ کے تحت میچ40اوورزتک محدودکردیاگیا اور اس وقت پاکستان کو  جیتنے کے لیے چار وکٹوں کے ساتھ 30 گیندوں پر 136 رنزدرکارتھے۔

کریس پر موجود عماد وسیم اور شاداب خان نے ٹیم کے اسکور میں کچھ اضافہ کیا تاہم مقررہ اوورز تک قومی ٹیم 6 وکٹوں کے نقصان پر 212 رنز بناسکی اور جیت 89 رنز کے بڑے فرق سے بھارت کے حصے میں آئی۔

بھارت کی جانب سے وجے شنکر، ہاردک پانڈیا اور کلدیپ یادہو نے 2 ، 2 وکٹیں حاصل کیں۔

پہلی اننگ

بھارت کی جانب سے اننگز کا آغاز روہت شرما اور لوکیش راہل نے کیا۔

دونوں بلے بازوں نے پراعتماد بیٹنگ کرتے ہوئے ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا اور اپنی نصف سنچری مکمل کی، روہت شرما نے 2 چھکوں اور 6 چوکوں کی مدد سے 34 گیندوں پر اپنی نصف سنچری مکمل کی جب کہ کے ایل راہل نے 69 گیندوں پر نصف سنچری بنائی۔

بھارت کی ٹیم جب 136 رنز پر پہنچی تو انڈیا کے لوکیس راہل 57 رنز پر وہاب ریاض کی گیند پر بابر اعظم کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

ان کے بعد آنے والے وہرات کوہلی ، روہت شرما کے ساتھ ٹیم کے اسکور کو آگے بڑھاتے ہوئے 234 تک لے گئے۔ بھارت کی دوسری وکٹ روہت شرما کی گری جو عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 140 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

بھارت کی تیسری گرنے والی وکٹ ہاردک پانڈیا کی تھی جو 26 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے اور پھر ایم ایس دھونی صرف ایک رن بناکر پویلین جا پہنچے۔

پاکستان اور بھارت کا میچ 46 ویں اوورز تک پہنچا تو میدان کو بادلوں نے گھیر لیا اور بارش تیز ہونے پر میچ کو روک دیا گیا۔ میچ روکنے سے پہلے تک بھارت نے 4 وکٹوں کے نقصان پر 305 رنز بنالیے تھے۔

بارش تھم جانے کے بعد ایک مرتبہ پھر میچ شروع ہوا اور بھارت کا مجموعی اسکور 314 رنز تک پہنچا تو وہرات کوہلی 77 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے ۔

بھارت نے مقررہ پچاس اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 336 رنز بنائے  اور قومی ٹیم کو جیت کے لیے 337 رنز کا ہدف دیا۔

پاکستان کی جانب سے محمد عامر نے 3 جبکہ حسن علی اور وہاب ریاض نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

ٹاس کے موقع پر کپتانوں کے تاثرات

ٹاس جیتنے کے بعد سرفراز احمد نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ماضی کو بھلا کر کھیل پر توجہ مرکوز ہے، بھارت کو جلد آوٹ کرنے کی کوشش کریں گے، پاکستان اور بھارت بڑا مقابلہ ہے، 2 تبدیلیوں کے ساتھ میدان میں آ رہے ہیں۔ کوشش ہو گی کہ میدان میں 100 فیصد کارکردگی دکھائیں۔

قومی ٹیم میں دو بڑی تبدیلیاں کی گئی ہیں، آصف علی اور شاہین آفریدی کی جگہ اسپنرز عماد وسیم اور شاداب خان کو ٹیم کا حصہ بنایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان ٹیم پوائنٹس ٹیبل پر 3 پوائنٹس ساتھ 9ویں نمبر پر موجود ہے جبکہ بھارت 5 پوائنٹس کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے، کرکٹ ورلڈ کپ میں ماضی کے میچوں میں انڈیا اور پاکستان چھ بار مد مقابل آچکے ہیں اور تمام میچوں میں انڈیا کو ہی کامیابی حاصل ہوئی۔

پاکستان ٹیم میں امام الحق ،فخر زمان،بابر اعظم،محمد حفیظ، سرفرازاحمد،شعیب ملک،عماد وسیم،شاداب خان،وہاب ریاض،حسن علی اور محمد عامر شامل ہیں۔

بھارتی ٹیم میں روہت شرما،کے ایل راہول،ویرات کوہلی،وجے شنکر،ایم ایس دھونی، کیدھر یادہو،ہاردک پانڈیا،بھوونیشور کمار،کلدیپ یادہو،یوزوندرا چہاہل اور جسپریت بمرا شامل ہیں۔

 

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay