ورلڈ کپ2019: پاکستانی ٹیم سیمی فائنل تک رسائی کیسےحاصل کر سکتی ہے ؟

آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ 2019ء کے 41 ویں میچ میں انگلینڈ نے نیوزی لینڈ کو 119 رنز سے شکست دے کر سیمی فائنل میں جگہ بنالی۔ آسٹریلیا اور بھارت کی ٹیمیں پہلے ہی سیمی فائنل کے لئے کوالیفائی کرچکی ہیں۔

پاکستانی ٹیم انگلینڈ کی شکست سے بڑی امیدیں لگائے بیٹھی تھی جن پر نیوزی لینڈ نے بآسانی پانی پھیر دیا ۔

میچ کے بعد سماجی روابط کے پلیٹ فارم پر دلچسپ اور طنزیہ پیغامات کا سلسلہ شروع ہو گیا ۔ جس میں جہاں 1992 کے ورلڈ کی نشانیوں کو زیر بحث لایا گیا وہیں قو می ٹیم کے شاہینوں کو سیمی فائنل تک رسائی کے طریقے بھی بتائے گئے ۔

ایک صارف نے ٹیم کو مشورہ دیا کہ ٹیم بنگلہ دیش کو غریسنگ روم میں بند کر کے باہر سے تالا لگا دیا تو سیمی فائنل تک رسائی ممکن ہے ۔ ایک صارف نے کپتان سرفراز کی تصویر کو عامل بابا سے ری پلیس کر کے لکھا ہے یہ بھی ایک طریقہ ہے ۔

سوشل میڈیا پر ایک صارف نے کیا خوب لکھا ہے کہ ‘ہم جس ٹیم سے امید لگاتے ہیں وہ ہار جاتی ہے ـ’ایک سوشل میڈیاصارف نے دلچسپ انداز میں لکھا کہ مورخ لکھے گا کہ ہم جس ٹیم کے جیتنے کی دعاکی اس کا بیڑا غرق ہوا ۔

ایک صارف نے نہایت معصومانہ انداز میں کہاکہ اے میری پیاری ٹیم تم نے ہمیں وہ میچ بھی دیکھائے جو ہم پر فرض بھی نہیں تھے ۔

ایک صارف نے 1992 کے ورلڈ کپ کی نشانیاں بتاتے ہوئےلکھا کہ 1992 میں بھی پی آئی اے سے ٹیم واپس آئی تھی ۔

ایک صارف نے لکھا کہ 92 کے ورلڈ کپ کی تمام نشانیاں ختم ہو چکی ہیں ،اگر اب بھی پاکستانی ٹیم سیمی فائنل میں پہنچ جائے تو یہ قیامت کی نشانی ہو گی۔

ویسے واقعی ہو گی تو یہ قیامت کی نشانی ہی کیونکہ پاکستان اوربنگلادیش کےدرمیان اہم میچ5جولائی کولندن میں کھیلا جائے گا سیمی فائنل میں  پہنچناتقریباًناممکن نظر آرہا کیونکہ میزبان ٹیم انگلینڈ کی کارکردگی نے پاکستان کو ٹیکنیکل طور پر ورلڈ کپ سے باہر کردیا ہے۔ اعداد وشمار بتاتے ہیں کہ اگر لارڈز میں پاکستان کی ٹیم چار سو رنز بنائے اور بنگلہ دیش کو316 رنز سے شکست دےتو پھر اس کا یہ سفر جاری رہ سکتا ہے لیکن یہ ہمالیہ سر کرنا تقریباًناممکن ہے۔

سابق قومی کرکٹرز اور ایکسپرٹس کے مطابق ٹیم مینجمنٹ، سلیکشن کمیٹی اور کپتان سب صورتحال کے ذمہ دار ہیں۔انہوں نے تویہاں تک کہہ دیا کہ ورلڈ کپ گلی محلے کا میچ نہیں، اس کے لیے پہلے پلاننگ کی جاتی ہے وہ کیوں نہ کی۔

خیر جو بھی ہے امید پر دنیا قائم ہے اچھے کی امید رکھنی چاہیے کیونکہ یہ ٹاسک ناممکن ہے مگر ممکن بنایا جا سکتا ہے ۔کیا معلوم پاکستانی  کرکٹ ٹیم کوئی تاریخ رقم کردے ۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay