پاکستان کی جیت اور بنگلہ دیش کی ہار،ورلڈکپ میں دونوں کے سفر کا اختتام

لارڈز: ورلڈکپ 2019 کے 43ویں میچ میں پاکستان نے بنگلہ دیش کو 94 رنز سے شکست دیکر میگا ایونٹ میں اپنا سفر جیت کی خوشی کے لمحات کے ساتھ پورا کرلیا۔

پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان ورلڈکپ 2019 کا 43واں میچ لارڈز میں کھیلا گیا جس میں قومی ٹیم نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 50 اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 315 رنز بناکر حریف ٹیم کو جیت کے لئے 316 رنز کا ہدف دیا۔

بنگلہ دیش کی جانب سے ہدف کے حصول کے لیے تمیم اقبال اور سومیا سرکار میدان میں اترے لیکن ٹیم کو اچھی شروعات فراہم کرنے میں ناکام رہے ، اوپنر سومیا سرکار 22 رنز بناکر پویلین لوٹ گئے۔

میدان میں اترنے والے اگلے بلے باز شکیب الحسن تھے جنہوں نے ٹیم کو سہارا دیا اور عمدہ بیٹنگ کی تاہم تمیم اقبال زیادہ دیر وکٹ پر نہیں ٹھہر سکے اور 8 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے ۔ ان کے مشفیق الرحمن 16،لٹن داس 32، شکیب الحسن 64،مصدق حسین 16، محمد سیف الدین 0، مشرفیع مرتضیٰ 15 اور مستفیض الرحمٰن 1 رن بناکر آؤٹ ہوئے۔

پاکستان کی جانب سے شاندار باؤلنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے شاہین شاہ آفریدی نے 6 وکٹیں حاصل کیں جبکہ شاداب خان نے 2 اور محمد عامر اور وہاب ریاض نے ایک، ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

پاکستان نے شاہین آفریدی کی عمدہ باؤلنگ کی بدولت بنگلہ دیش کو 94 رنز سے شکست دے دی اور میچ کے اختتام کے ساتھ ہی پاکستان اور بنگلہ دیش، دونوں ٹیموں کا ورلڈکپ 2019 میں سفر اپنے اختتام کو پہنچ گیا۔ بنگال ٹائیگرز نے 44ویں اوور تک اپنی تمام وکٹیں گنوا کر 221 رنز کے مجموعی اسکور تک ہی پہنچ سکی تھی۔

اس سے قبل پاکستان کی جانب سے اننگ کا آغاز فخرزمان اور امام الحق نے کیا۔ لیکن اپنی ٹیم کو اچھی شروعات نہیں دے سکے اور 23 کے مجموعی اسکور پر فخرزمان 13 رنز بناکر محمد سیف الدین کی گیند پر مہدی حسن کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

شاہینوں کی دوسری وکٹ بابراعظم کی گری جو 96 رنز کی اننگ کھیل کر محمد سیف الدین کی گیند پر ایل بی ڈیبلیو آؤٹ ہوئے۔ تیسرا نقصان امام الحق کا ہوا جو 100 رنز کی شاندار اننگ کھیل کر مستفیض الرحمان کی گیند پر ہٹ وکٹ آؤٹ ہوئے۔

قومی ٹیم کی چوتھی وکٹ محمد حفیظ کی گری جو 27 رنز بناکر مہدی حسن کی گیند پر شکیب الحسن کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ پانچواں نقصان حارث سہیل کا ہوا جو 6 رنز بناکر مستفیض الرحمان کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

پاکستان کی چھٹی وکٹ وہاب ریاض کی گری جو 2 رنز بناکر محمد سیف الدین کی گیند پر کلین بولڈ ہوئے۔ ساتواں نقصان شاداب خان کا ہوا جو 1 رن بناکر مستفیض الرحمان کی گیند پر انہیں کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

شاہینوں کی آٹھویں وکٹ عماد وسیم کی گری جو 43 رنز بناکر مستفیض الرحمان کی گیند پر تمیم اقبال کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ نواں نقصان محمد عامر کا ہوا جو 8 رنز بناکر مستفیض الرحمان کا شکار ہوئے۔

بنگلہ دیش کی جانب سے مستفیض الرحمان نے 5 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جب کہ محمد سیف الدین نے 3 اور مہدی حسن نے ایک وکٹ حاصل کی۔

پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان 43ویں میچ میں قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے بنگال ٹائیگرز کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے خود بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

ٹاس کے موقع پر قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ بڑا اسکور کرنے کی کوشش کریں گے اور ہمیں پتہ ہے مارجن بہت زیادہ ہے۔ رنز کا فرق ختم کرنے کی کوشش کریں گے۔

سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی اور ایک میچ کا فرق رہ گیا جس پر افسوس ہے۔ ویسٹ انڈیز کیخلاف ہارنے پر مایوسی ہوئی اور کوشش ہوگی ایونٹ کا اختتام جیت پر کریں۔

بنگلادیشی کپتان مشرفی مرتضی کا کہنا تھا کہ ٹاس جیت جاتے تو ہم بھی بیٹنگ ہی کرتے اور ہم پاکستان کیخلاف اچھی کرکٹ کھیلتے ہیں۔

پاکستان اسکواڈ:

سرفراز احمد (کپتان)، فخرزمان، امام الحق، بابراعظم، محمد حفیظ، حارث سہیل، عماد وسیم، شاداب خان، وہاب ریاض، محمد عامر اور شاہین شاہ آفریدی شامل تھے۔

بنگلہ دیش اسکواڈ:

مشرفی مرتضی (کپتان)، تمیم اقبال، سومیا سرکار، شکیب الحسن، مشفیق الرحیم، لٹن داس، مصدیق حسین، محمود اللہ، مہدی حسن، محمد سیف الدین اور مستفیض الرحمان شامل تھے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay