میں کپتانی نہیں چھوڑوں گا، سرفراز احمد

کراچی: قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ میں کپتانی نہیں چھوڑوں گا۔

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ابتدائی 5 میچز میں ہم اچھا پر فارم نہ کرسکے اور آخر کے 4 میچز میں اچھا کھیل پیش کیا۔ انگلینڈ کے خلاف میچ میں کم بیک کیا جب کہ ویسٹ اینڈیز  کے خلاف آغاز اچھا نہیں ہوا۔

سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ بدقسمتی سے رن ریٹ کی بنیاد پر سیمی فائنل میں نہ جاسکے اور رن ریٹ کو بہتر کرنے کی پوری کوشش کی۔ آسٹریلیا اور بھارت کے خلاف اچھا نہ کھیل سکے اور بدقسمتی سے سری لنکا کے خلاف میچ بارش کی نذر ہوا۔

انکا کہنا تھا کہ بھارت سے شکست کے بعد کا ہفتہ بہت سخت تھا اور شکست کے بعد پوری ٹیم کو بٹھا کر میٹنگ کی تھی۔ بھارت سے شکست کے بعد کھلاڑیوں کیساتھ برے واقعات ہوئے اور ٹیم مینجمنٹ اور لڑکوں نے جس طرح ردعمل دیا زبردست تھا۔

قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن ہوں اور میں کپتانی نہیں چھوڑوں گا۔ چیئرمین پی سی بی نے مجھے کپتان بنایا انہیں ہی فیصلہ کرنا ہے جبکہ تمام جونیئر اور سینئر کرکٹرز نے اچھا کھیل پیش کیا۔

سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ میرے فیصلے سے کچھ نہیں ہوتا ہے فیصلے بورڈ نے کرنے ہیں اور شعیب ملک کو آخری میچ میں نمائندگی نہ ملنا افسوسناک ہے۔ وننگ کمبی نیشن کیساتھ جانا چاہتے تھے اس لیے شعیب کو موقع نہ ملا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ناکامی پر ہمیں بھی اتنا ہی دکھ ہوتا ہے جتنا سب کو ہوتا ہے اور جانتا ہوں شکست پر تنقید ہوتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہیڈ کوچ اور چیف سیلیکٹر کی پوری سپورٹ رہی۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay