ٹیم میں کوئی گروپ بندی نہیں، خبریں بے بنیاد ہیں، عماد وسیم

راولپنڈی: قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر عماد وسیم کا کہنا ہے کہ ٹیم میں کوئی گروپ بندی نہیں، خبریں بے بنیاد ہیں۔

قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر عماد وسیم کا پریس کانفرنس میں کہنا تھا کہ ٹیم میں کوئی گروپ بندی نہیں ہے اور ٹیم میں گروپ بندی کی خبریں بے بنیاد ہیں۔ ٹیم میں کوئی گروپ بندی ہوتی تو میں نہ کھیلتا جب کہ سرفراز احمد اور کوچ کے بارے میں سوال ان سے ہی کیے جائیں۔

عماد وسیم کا کہنا تھا کہ سرفراز احمد کو میں 15 سال سے جانتا ہوں اور ان سے میرے اچھے تعلقات ہیں۔ اللہ نے جو نصیب میں لکھا وہی ملتا ہے اور اگر پاکستان ورلڈکپ جیت جاتا تو اپنی کارکردگی سے خوش ہوتا۔

انکا کہنا تھا کہ بھارت سے ہار کے بعد بہت دباؤ تھا اور بھارت سے شکست کے بعد کپتان نے نئے جذبے سے کھیلنے کا مشورہ دیا تھا۔ نیوزی لینڈ اور جنوبی افریقہ سے میچ میں پہلا مقصد جیتنا تھا اور ورلڈ کپ میں ہمارے اسپمنرز کی کارکردگی اچھی رہی ہے۔

قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر عماد وسیم کا کہنا تھا کہ ہم جانے سے پہلے وزیراعظم سے ملے تھے اور عمران خان نے اپنے تجربات شیئر کیے تھے۔ ٹیم کے سارے لڑکے پاکستان کیلئے کھیل رہے تھے اور دنیا میں کہیں ایسا نہیں ہوتا جیسا ہمارے یہاں ہوتا ہے۔

عماد وسیم کا کہنا تھا کہ ورلڈ کپ سے کوئی بھی اس طرح واپس نہیں آنا چاہتا ہے جبکہ ویسٹ انڈیز کیخلاف میچ برا ہارے جس سے رن ریٹ خراب ہوا۔ نیوزی لینڈ کے خلاف میچ میں رن ریٹ بہتر کرنا چاہیے تھا اور بھارت سے جب بھی میچ ہارتے ہیں بطور قوم زیادہ دکھ ہوتا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ شائقین کا ایک دوسرے سے الجھنا مناسب نہیں تھا اور افغانستان کیخلاف میچ میں شائقین کو تحمل کا مظاہرہ کرنا چاہیے تھا۔ کم از کم وزیراعظم کا مجھے تو کوئی پیغام نہیں آیا اور ہمیں ورلڈ کپ کے دوران وزیراعظم کا کوئی پیغام نہیں آیا۔

قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر عماد وسیم کا کہنا تھا کہ میں قسمت پر نہیں پرفارمنس پر یقین رکھتا ہوں جبکہ راشد خان کے خلاف رنز بنانا آسان نہ تھا۔ راشد خان ورلڈ کلاس بولر ہے اور سرفراز کی میٹنگ میں سب لڑکوں نے اپنا اپنا ان پٹ دیا تھا۔

عماد وسیم کا کہنا تھا کہ میری نظر میں انٹرنیشنل کرکٹ میں کوچز کا رول بہت کم ہوتا ہے اور میٹنگ میں سرفراز احمد نے کہا ہمیں ٹورنامنٹ میں کم بیک کرنا ہے۔ سرفراز نے بھارت کے میچ کے بعد خود میٹنگ بلائی تھی۔

آل راؤنڈرعماد وسیم کا کہنا تھا کہ جن ٹیموں نے ہمیں ہرایا انہوں نے ہم سے اچھا کھیلا تھا  اور بھارت  کے خلاف میچ کو ہماری قوم جنگ کی طرح لیتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ استعفیٰ دینا کپتان کا اپنا فیصلہ ہوگا۔

فیلڈنگ کے بارے میں فیلڈنگ کوچ زیادہ بہتر بتا سکتے ہیں، شاداب خان

قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر عماد وسیم کے ہمراہ شاداب خان کا پریس کانفرنس میں کہنا تھا کہ فیلڈنگ کے بارے میں فیلڈنگ کوچ زیادہ بہتر بتا سکتے ہیں اور ٹیم نے آخری 4 میچز میں اچھا کھیل پیش کیا تھا۔ ورلڈ کپ میں ٹیم کی پرفارمنس اچھی رہی۔

شاداب خان کا کہنا تھا کہ 3 میچز رینکنگ میں اچھی ٹیموں کیخلاف جیتے ہیں اور بھارت کے خلاف میچ میں ہمارا دن بھی خراب تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارتی ٹیم نے پورے ٹورنامنٹ میں اچھی کرکٹ کھیلی ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay