منی لانڈرنگ کیس : حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 7 دن کی توسیع

اسلام آباد: احتساب عدالت نے پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 7 دنوں کی توسیع کر دی ۔

تفصیلات کے مطابق نیب نے حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ کی معیاد مکمل ہونے پر انہیں احتساب عدالت میں پیش کیا۔ نیب کے وکیل نے بتایا کہ حمزہ شہباز کی مزید 2 کمپنیوں کا سراغ ملا ہے، اس لیے اس کی تفتیش کیلئے ان کا مزید ریمانڈ دیا جائے۔

جس پر حمزہ شہباز کے وکیل نے مزید جسمانی ریمانڈ کی مخالفت کی اور اسے بلاجواز قرار دتے ہوئے استدعا کی کہ نیب کی درخواست مسترد کی جائے۔

احتساب عدالت کے جج امیر محمد خان نے نیب کی درخواست منظور کرتے ہوئے حمزہ شہباز کو 10 اگست کو دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا۔

کمرہ عدالت میں سابق اسپیکر پنجاب اسمبلی رانا اقبال سمیت مسلم لیگ (ن) کے دیگر ارکان اسمبلی نے حمزہ شہباز سے ملاقات کی۔ عدالتی کارروائی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں حمزہ شہباز نے بتایا کہ ہارس ٹریڈنگ ہوئی یانہیں اس سےمتعلق کمیٹی بنادی گئی ہے،سینیٹ الیکشن سےمتعلق فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی فیصلہ کرےگی۔جائزہ لےرہےہیں64میں سے50کیسےووٹ ڈالنےوالےرہ گئے۔

حمزہ شہباز نے کہا کہ  مہنگائی کا جن ان کی نیت کی وجہ سےبےقابوہواہے،عمران خان کبھی بھی ملک کوترقی کی راہ پرگامزن نہیں کرسکتے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay