لیجنڈ اداکارعابدعلی انتقال کرگئے،اہلیہ کی تصدیق

کراچی: پاکستانی ڈرامہ اور فلم انڈسٹری کے معروف اداکار عابد علی طویل علالت کے بعد انتقال کرگئے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان ڈرامہ انڈسٹری کے نامور و لیجنڈ اداکار عابد علی گزشتہ طویل عرصے سے جگر کے عارضے میں مبتلا تھے اور اسپتال میں زیر علاج تھے اور وہ اپنی بیماری سے لڑتے ہوئے 67 برس کی عمر میں زندگی کی بازی ہار گئے۔

عابدعلی کی حالت چند دنوں سے تشویشناک تھی اور ان کے اہلخانہ نے لوگوں سے ان کی صحتیابی کے لیے دعا کرنے کی درخواست کی تھی۔ اداکار کے انتقال کی خبر کی تصدیق ان کی اہلیہ نے کی ہے۔

کوئٹہ میں پیدا ہونے والے عابد علی نے ریڈیو پاکستان سے فنی کیریئر کا آغاز کیا لیکن پاکستان ٹیلی وژن کے 1979 میں نشر ہونے والے معروف ڈرامہ ‘وارث’ میں ‘دلاور’ کے کردار نے انہیں پہچان دی۔

عابد علی 80 اور 90 کی دہائی سے کئی مقبول ڈراموں میں کام کیا جن میں ‘پیاس’، ‘دوریاں’، ‘دشت’، ‘مہندی’، ‘دیار دل’ اور نجی ٹی وی چینل کا ڈرامہ ‘میرا رب وارث’ دیگر شامل ہیں۔

عابد علی نے فلموں میں بھی اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے۔ ان کی پہلی فلم 1979 میں ریلیز ہونے والی ‘خاک اور خون’ جب کہ حال ہی میں ریلیز ہونے والی ‘ہیر مان جا’ ان کی زندگی کی آخری فلم ثابت ہوئی۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay