وفاقی کابینہ کا اہم اجلاس : مختلف اداروں میں تعیناتیوں سمیت اہم فیصلے

اسلام آباد :  ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ایل او سی پر  متاثرہ خاندانوں کو امداد و دیگر اہم فیصلے کیے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق نے وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں بتایاکہ اجلاس میں مختلف اداروں میں تعیناتیوں کےفیصلےکیےگئے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ12دسمبرکےاقتصادی رابطہ کمیٹی کےفیصلوں کی توثیق کردی گئی  ۔معاون خصوصی نے عرفان بخاری کوچیئرمین ایگزم بینک پاکستان تعیناتی کی منظوری سے بھی آگاہ کیا ۔

 اجلاس میں ایل او سی پربھارتی فائرنگ سےمتاثرہ افرادکی امدادوبحالی کےلیےپیکج  کی منظوری دی گئی ہے جسکے تحت 13ہزار982متاثرہ گھرانوں کوبحالی کی رقم فراہم کی جائے گی۔پیکج کےتحت متاثرہ گھرانوں67کروڑروپےکی امداددی جائےگی۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ پاکستان اسپورٹس بورڈ جنجال پورہ بناہواتھا،وفاقی کابینہ اجلاس میں پی سی بی کیلئے11ارکان کی منظوری دی گئی ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت عام آدمی کوریلیف فراہم کرنےکیلئےاقدامات کررہی ہے، وزیراعظم کاوژن ہےپاکستان میں غربت کا جلد خاتمہ ہو ۔

ای سی ایل کے حوالے سے   26 افراد کے نام  اجلاس میں زیر بحث آئےاور کابینہ نے4نام ای سی ایل میں ڈالنےاور8نکالنےکی منظوری دے دی ہے ۔

مریم نواز کے نام کے حوالے سے انکا کہنا تھا کہ ذیلی کمیٹی نےمریم نوازکانام ای سی ایل سےنکالنےکی مخالفت کی ہے ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ جوبھی کریں گےآئین وقانون کےدائرہ کارمیں رہ کرکریں گے۔

آرمی چیف کی توسیع سے متعلق پوچھے گئے سوال پر انکا کہنا تھا کہ آرمی چیف کےمعاملےپرکابینہ اجلاس میں بات نہیں ہوئی ہے ۔

راناثناءاللہ کی رہائی کے متلعق معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ راناثناءاللہ کےمعاملےپرمتعلقہ وزیرحقائق سامنےلائیں گے، اےاین ایف نےثبوت اس وقت دینےہیں جب ٹرائل ہوگا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ لیگل کمیٹی کوکام کرنےدیں۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay