اسپورٹس کمپلکس بنایا ہے کوئی نائٹ کلب نہیں، احسن اقبال

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال کا کہنا ہے کہ اسپورٹس کمپلکس بنایا ہے کوئی نائٹ کلب نہیں بنایا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں نارووال اسپورٹس کمپلیکس سٹی منصوبے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ نیب نے احسن اقبال کو جوڈیشل ریمانڈ مکمل ہونے پرعدالت میں پیش کیا، نیب پراسیکیوٹر نے لیگی رہنما کے ریمانڈ میں مزید 14 روز کی توسیع کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ احسن اقبال اقامے کی بنیاد پر ملازمت کرتے رہے۔

عدالت کے باہر پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال کا میڈٰیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ نیب کیس تاریخ میں لطیفے میں لکھا جائے گا اور ایک نارووال اسپورٹس کمپلکس نہیں 10 اور کمپلکس بننے چاہیے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ میں نے اسپورٹس کمپلکس بنایا ہے کوئی نائٹ کلب نہیں بنایا اور یہ ایک کھنڈر تھا ہم نے اس کو مکمل کیا۔ ایسے بہت سے منصوبے ہیں جن میں وفاقی حکومت مدد کرتی ہے۔

انکا کہنا تھا کہ ان کو اعتراض ہے کہ پراجیکٹ نارووال میں کیوں بنا اور کیا نارووال اسرائیل میں ہے یا بھارت کا حصہ ہے۔70 سال میں ایسا کوئی پراجیکٹ نہیں بنا اور 40 کروڑ کا بجٹ روک کے پراجیکٹ کو کھنڈر بنا دیا ہے۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال کا کہنا تھا کہ اب دوبارہ سیٹ کرنے میں اربوں روپے لگیں گے اور میں درخواست دینا چاہتا ہوں، عمران خان کو کیس میں شامل کیا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان نے پراجیکٹ کا بجٹ روکا۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay