پانچ فروری : یوم یکجہتی کشمیر

پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج یوم یکجہتی کشمیر منایا جارہا ہے ۔ اس دن کو منانے کا مقصد پاکستانی قوم کی طرف سے کشمیریوں کی اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق خودارادیت کے ناقابل تنسیخ حق کے حصول کی جدوجہد میں ان کے ساتھ مکمل حمایت کا اظہار کرنا ہے۔

یہ دن منانے کا مقصد مظلوم کشمیری عوام کی حالت زار اجاگر کرنا اور اس دیرینہ تنازع سے متعلق عالمی برادری کو اس کی ذمہ داریوں کی یاددہانی کرنا ہے۔

اس مرتبہ یہ دن گزشتہ برس اگست2019 میں بھارت کی طرف سے تمام عالمی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مقبوضہ جموں وکشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کئے جانے کے تناظرمیں منایا جارہا ہے جہاں بھارت نے وہاں غیر معینہ مدت کیلئے کرفیو نافذ کررکھا ہے اور تمام مواصلاتی رابطے منقطع ہیں۔

وزیراعظم عمران خان  نےمظلوم کشمیری بھائیوں سے بھرپور اظہار یکجہتی کیلئے مظفر آباد میں آزاد جموں وکشمیرکی قانون ساز اسمبلی کے خصوصی اجلاس سے خطاب کیا ۔

اٹوٹ رشتوں اورلازوال محبتوں کی تجدید کے  اس دن شہرشہرہاتھوں کی زنجیریں بنا کر کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کیا جا رہا ہے ۔

کشمیر کے دیرینہ مسئلے کے انسانی پہلووں کو موثر انداز میں اجاگر کرنے کے آزاد کشمیر سمیت ملک بھر میں ریلیاں نکالی جاری ہیں  جلسے جلوس اور سیمینارکا بھی انعقاد کیا جا ہا جن کا مقصد عالمی برادری کی توجہ بے گناہ کشمیریوں پر بھارتی فوج کے مظالم اورانسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کی طرف مبذول کرانا ہے۔

ٹیلی ویژن اور ریڈیو اس دن کی مناسبت سے خصوصی پروگرام نشر کیے جا رہے ہیں  جن کے زریعے تنازع کشمیر کے مختلف پہلوؤں کو اجاگر کرنے کے ساتھ کشمیریوں کی مسلسل جدوجہد کو خراج تحسین پیش کیا جائے گا ۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay