کرلیں راضی، اس رات رب کو

شبِ معراج کے موقع پر شاعرِامن کاشف شمیم صدیقی کا کلامِ خاص

کرلیں راضی، اس رات رب کو!

سمجھوں گا کہ حاصل ہوا
مقصدِ حیات
گر جاں جُدا ہو جسم سے مدینے‘ میں
اور روح کرے طواف
’کعبے‘ کا

اے کاش حشر میں ملے
یوں میری محنتوں کا صلہ،
وہ ﷺ مُسکرا کر دیکھیں مجھے
اور میں کہہ دوں ’ صَلِ عَلیٰ‘

کیوں ڈر ہو مجھے لحد میں،
تنگیِ زمیں کا،
میں تو امتّی ہوں،
رحمت للعالمین ﷺ کا،

گر کٹے عمر ساری
اطاعتِ رسول ﷺ میں،
کیا بھلا ہو پریشانی
پھر جنت کے حصول میں!

لب پر ہوں درود میرے
ہو نامِ خدا، وظیفہ میرا
پھر مشکلیں
نہ کیونکر سبھی تمام ہوں
جب نعرہ بُلند فضاؤں میں
ہو حیدری میرا !

شاعرِامن

کاشف شمیم صدیقی

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay