پاکستان اور چین کے آزاد پتن پن بجلی منصوبے کی تعمیر کیلئے معاہدے پردستخط

پاکستان اور چین نے آزاد پتن پن بجلی منصوبے کی تعمیر کیلئے ایک معاہدے پردستخط کئے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے اسلام آباد میں اس منصوبے کیلئے چائنہ GEZHOUBA کے ساتھ معاہدے پردستخط کی تقریب میں شرکت کی ۔

آزاد پتن پن بجلی منصوبہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کاحصہ ہے جس پر ڈیڑھ ارب ڈالر کی لاگت آئے گی اوراس سے سات سو میگاواٹ سے زائد بجلی پیدا ہوگی اس منصوبے کیلئے ایندھن درآمد کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی اور یہ ملک میں سستی اور ماحول دوست توانائی کی پیداوار میں مدد دے گا۔ یہ منصوبہ دریائے جہلم پر واقع اور 2026 میں مکمل ہونے کی توقع ہے ۔

آزادپتن پن بجلی منصوبے کا بنیادی مقصد سستی توانائی کی فراہمی ہے:عاصم باجوہ

چین پاکستان اقتصادی راہداری کے چیئرمین عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ آزادپتن پن بجلی منصوبے کا بنیادی مقصد سستی اورماحول دوست توانائی کی فراہمی ہے۔ ایک ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ اس منصوبے سے پنجاب اور آزاد جموں وکشمیر کو ایک ارب اڑتیس کروڑ روپے کی سالانہ آمدن ہوگی۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay