کشمیریوں کےخلاف جرائم پربھارت کااحتساب کیاجائے، پاکستان

پاکستان نے ایک بار پھر مطالبہ کیا ہے کہ کشمیریوں کے خلاف جرائم پربھارت کا احتساب کیاجائے ۔

دفترخارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ نے آج اسلام آباد میں ہفتہ وار نیوز بریفنگ کے دوران کہاکہ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے صدر کو ایک اور خط لکھا ہے جو عالمی ادارے کو غیرقانونی طورپر بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے آگاہ کرنے کی کوششوں کا حصہ ہے۔

وزیرخارجہ نے اپنے خط میں مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی منظم اور سنگین خلاف ورزیوں مقبوضہ علاقے میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کیلئے بھارت کے غیرقانونی اقدامات اوربھارت کے جنگی جنون ، بیان بازی اور کارروائیوں سے امن وسلامتی کو درپیش خطرات کو اجاگرکیا ہے ۔

ترجمان نے کہاکہ بھارتی حکومت کی جانب سے ایمنسٹی انٹرنیشنل کے خلاف حالیہ کارروائی اس کے انتہاپسندایجنڈے کی ایک اور عکاسی ہے جو انسانی حقوق کی خودمختار تنظیموں سے سچ سننے کیلئے تیار نہیں ہے ۔

انہوں نے کہاکہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت کی کارروائی نے ایک بار پھر دنیا کے سامنے بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کردیا ہے ۔دنیا میں سب سے بڑی نام نہاد جمہوریت مکمل طورپر بے نقاب ہوگئی ہے۔

ترجمان نے بھارت کی نام نہاد ہمسائیگی کی پہلی پالیسی کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ایسی کوئی پالیسی موجود نہیں اور یہ صرف ایک دکھاوا ہے۔انہوں نے کہا کہ موجودہ بھارتی قیادت کو دراصل چناکیا نظریے سے رہنمائی حاصل ہے جو بھارتیہ جنتا پارٹی اور راشٹریہ سوائم سیوک سنگھ دونوں کے نظریات کا امتزاج ہے۔

انہوں نے کہا کہ وقت کا تقاضہ ہے کہ وزیراعظم مودی اور ان کے ساتھیوں کو سنجیدگی سے صورتحال کا مشاہدہ کرنا ہوگا۔

زاہد حفیظ چوہدری نے بھارتی جاسوس کمانڈر کلبھوشن یادیو کی اسکے والد اور اہلیہ سے ملاقات کا اہتمام کرنے کی پاکستان کی پیشکش کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہماری پیشکش برقرار ہے تاہم بدقسمتی سے ہمیں بھارتی حکام کی جانب سے کوئی درعمل نہیں ملا۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay