شاعر ناصر کاظمی کو اپنے مداحوں سے بچھڑے 49 برس بیت گئے

آج شاعر ناصر کاظمی کو اپنے مداحوں سے بچھڑے 49 برس بیت گئے ہیں۔

غم دوراں و غم جاناں کے درد سے آشناغزل گو شاعر ناصر رضا کاظمی نے 13 برس  کی عمر سے ہی شعر کہنا شروع کردیے تھے۔

ناصر کاظمی کی غزلوں نے کئی گلوکاروں کو شہرت دلائی۔ جن میں ‘نئے کپڑے بدل کر جاؤں کہاں’، ‘دل دھڑکنے کا سبب یاد آیا’، دل میں اک لہر سی اٹھی ہے ابھی، اور نیتِ شوق بھر نہ جائے کہیں  جیسی غزلیں شامل ہیں۔ ان کی غزلوں پر مشتمل  تین  مجموعہ  کلام  ‘برگِ نے’، ‘ دیوان’ اور ‘بارش’ موجود ہیں۔ اور ایک نظموں کا مجموعہ ‘نشاط خواب’ بھی موجود ہے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay