پاکستان اسٹاک ایکس چینج: 100انڈیکس مزید96.82پوائنٹس کے اضافے سے 44587.85 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا

Pakistan-stock-exchange

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میںمسلسل دوسرے روز بدھ کو بھی کاروبار حصص میںتیزی کا رجحان برقرار رہا جس کے باعث کے ایس ای100انڈیکس مزید96.82پوائنٹس کے اضافے سے 44587.85پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیاجبکہ 60.54فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میںاضافہ ریکارڈ کیاگیا جس کے نتیجے میںمارکیٹ کامجموعی سرمایہ 26ارب78کروڑ روپے سے زائد بڑھ گیا اورحصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم منگل کی نسبت 30.90فیصد زائد رہا۔

بدھ کو ٹریڈنگ کے آغاز سے ہی سرمایہ کاروں کی جانب سے حصص خریداری میں دلچسپی لی گئی جس کے باعث تیزی دیکھنے میں آئی اور دوران ٹریڈنگ کے ایس ای100انڈیکس 45ہزار کی نفسیاتی حد کو عبور کرتے ہوئے 45130پوائنٹس کی بلند سطح پرپہنچ گیا۔ بعد ازاں پرافٹ ٹیکنگ رجحان کی وجہ سے45ہزارکی سطح برقرار نہ رہ سکی لیکن تیزی کا رجحان غالب رہااور کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس 96.82پوائنٹس کے اضافے سے 44587.85پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا۔

اسی طرح کے ایس ای 30انڈیکس10.38پوائنٹس کے اضافے سے18268.62پوائنٹس، کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس105.83پوائنٹس کے اضافے سے30498.20پوائنٹس اور کے ایم آئی30انڈیکس406.37پوائنٹس بڑھ کر73039.96پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیا۔مارکیٹ میں مجموعی طور پر403کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں244کمپنیوں کے حصص کی قیمت میں اضافہ، 150میں کمی اور 9میں استحکام رہا ۔

کاروبار میںتیزی کے باعث مارکیٹ کا مجموعی سرمایہ 26 ارب78کروڑ82لاکھ51ہزار518 روپے بڑھ کر 78 کھرب 92 ارب 19 کروڑ 90 لاکھ 59 ہزار577 روپے ہو گیا۔سرگرم کمپنیوں میں بائیکو پیٹرولیم،ٹی آر جی پاکستان،پاکستان ریفائنری، یونٹی فوڈز،غنی گلوہول،حیسکول پیٹرول،اٹک ریفائنری،اذگارڈ نائن،فوجی فرٹیلائزر اور نیٹسول ٹیکنالوجی شامل ہیں۔

قیمتوں میں اتار چڑھاو کے لحاظ سروس انڈسٹریز78.18روپے کے اضافے سے 1120.68 روپے اورفلپ موریس70.50روپے کے اضافے سے1038روپے ہوگئی جبکہ کولگیٹ پامولو137روپے کی کمی سے2700روپے اور سیپ ہائر ٹیکس کے حصص16.95روپے کی کمی سے820.05روپے ہوگئی ۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay