پیپلزپارٹی اور اے این پی اپنے فیصلوں پرنظرثانی کریں،مولانافضل الرحمان

اسلام آباد میں مولانافضل الرحمان نے اجلاس میں کہا ہے کہ پیپلزپارٹی اور اے این پی اپنے فیصلوں پرنظرثانی کریں، پی ڈی ایم آپ کی بات سننےکوتیارہے۔

پی دی ایم کے سربراہ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ پی ڈی ایم 10جماعتوں کے اتحاد کا نام ہے، جوقائدین نہیں آسکےان سےفون پررابطہ ہوا، اتحادکاعمل باضابطہ تنظیمی ڈھانچہ بھی ہے، پی ڈی ایم میں تمام جماعتوں کی حیثیت برابرکی ہے، اکثر فیصلے ہمارےاتفاق رائےسےقوم کےسامنے آئےہیں، آج کابیان آنےوالےقائدین کےاتفاق سےجاری کررہےہیں۔

 چیئرمین،ڈپٹی چیئرمین کےامیدواروں کاتعین اتفاق رائےسےہواتھا، جس جماعت سے شکایت تھی اس سے وضاحت طلب کی گئی، فیصلوں کی خلاف ورزی پر وضاحت طلب کرنا تقاضاتھا، جواب کےلیےپی ڈی ایم سربراہی اجلاس بلانےکامطالبہ کرسکتےتھے، ہم نہیں چاہتے تنظیمی معاملات کو چوک و چوراہوں پر لائیں، دونوں جماعتیں اپنےساتھیوں کوباوقاراندازمیں جواب دیتے، دونوں جماعتوں کی سیاسی قد کاٹھ اور تجربات کاتقاضا تھا، غیرضروری طورپرعزت نفس کامسئلہ بناناسیاسی تقاضوں کےمطابق نہیں۔

مولانافضل الرحمان نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم عہدوں اورمنصب کےلیےلڑنےکافورم نہیں ہے، پی ڈی ایم اس لیے نہیں بنی عہدوں پر لڑیں، بڑی بڑی مشکلیں آئیں،گفتگواورفہام تفہم سےراہ نکالی گئی،  پیپلزپارٹی اور اے این پی اپنے فیصلوں پرنظرثانی کریں، پی ڈی ایم آپ کی بات سننےکوتیارہے،موقع ہےفیصلوں پرنظرثانی کرکےپی ڈی ایم سےرجوع کریں،پی ڈی ایم بہت سنجیدہ فورم ہےجوقومی مقاصدکےلیےہے، افسوس ہے کہ انہوں نےپی ڈی ایم سےعلیحدگی کااعلان کردیا۔

سیاست میں وقارپیداکریں جس کے لیےہم منتظررہیں گے،ہمیں توقع نہیں تھی کہ پیپلزپارٹی بی اےپی کوباپ بنائےگی، ملک وقوم کےبجائےاپنےمفادات دیکھ کر فیصلے نہیں کریں گے، استعفوں کافیصلہ پی ڈی ایم اجلاس میں کریں گے،قائد حزب اختلاف کےامیدوارکاتعین تحریری طورپراتفاق رائےسےہوا، فیصلوں کی خلاف ورزی کے جو نتائج برآمد ہوئےوضاحت طلب کرناتنظیمی تقاضا تھا۔

پی دی ایم کے سربراہ نے مزید کہا ہے کہ جس جماعت سےشکایت تھی اس سےوضاحت طلب کی، مکمل احترام اوروقارکومدنظررکھ کروضاحت طلب کی گئی، پیپلزپارٹی اے این پی کا استعفیٰ بھیجناافسوسناک ہے، قوم مہنگائی میں پس رہی ہے،ملک قرضوں میں دھنستاجارہاہے،پی پی ارکان اسمبلی نےپی ڈی ایم کواستعفےبھجوادیئے، جومیرےساتھ ہیں ان سےکہتاہوں بیان بازی میں نہیں پڑنا۔

ہمیں توقع تھی کہ وہ باپ کوباپ بنائیں گے،انہوں نےخودکوعلیحدہ کیاہم ان کوخودموقع دےرہےہیں،پارٹی اپنی جگہ کھڑی ہوتی ہے،لوگ آتےجاتے رہتے ہیں،میراخیال ہےپیپلزپارٹی نےبہت زیادتی کی ہے،پاکستان کی معیشت ڈوبتی جارہی ہے، پی ڈی ایم برقرارہےاوررہےگی،آخری دم تک عوام کےساتھ ہیں،پی ڈی ایم خون کےآخری قطرےتک عوام کےساتھ رہےگی۔

 

 

 

 

 

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay