مقبوضہ بیت المقدس،اسرائیلی پولیس کا فلسطینیوں پر تیسرے دن بھی تشدد

مقبوضہ بیت المقدس میں اسرائیلی پولیس نے تیسرے روز بھی فلسطینیوں پر تشدد کیا۔ آج بھی مقبوضہ بیت المقدس میں مسجد الاقصیٰ کی عمارت کے قریب فلسطینی نمازیوں اور اسرائیل پولیس کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیلی سکیورٹی فورسز نے آنسو گیس اور ربڑ کی گولیوں کا استعمال کیا جس کے نتیجے میں سیکڑوں فلسطینی زخمی ہوگئے۔آج شہر میں صیہونی قوم پرستوں کے مجوزہ مارچ کے پیش ِنظر کشیدگی بڑھنے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ بہت سے فلسطینیوں کے مطابق انہیں جان بوجھ کر اشتعال دلایا جا رہا ہے۔ مقبوضہ بیت المقدس کے ضلع شیخ Jarrah کے بعض حصوں سے فلسطینی خاندانوں کو بے دخل کرنے کی دھمکیوں پر شہر میں شدید کشیدگی پائی جاتی ہے۔  گزشتہ تین روز میں اسرائیلی پولیس نے سیکڑوں فلسطینیوں کو زخمی کیا تھا۔

امریکہ،روس،یورپی یونین اوراقوام متحدہ کا مقبوضہ بیت المقدس میں تشدد کے واقعات پرتشویش

مشرق وسطیQuartet کے چار ارکان امریکہ، روس،یورپی یونین اور اقوام متحدہ نے مقبوضہ بیت المقدس میں تشدد کے واقعات پرگہری تشویش ظاہر کی ہے۔ ایک بیان میں سفارتکاروں نے اسرائیلی حکام پر زور دیا کہ وہ ضبط و تحمل کا مظاہرہ کرے اور ایسے اقدامات سے گریز کرے جن سے صورتحال مزید کشیدہ ہو۔

ادھرسعودی عرب ،متحدہ عرب امارات اور اومان نے مشرقی بیت المقدس کے علاقے میں بڑھتی ہوئی کشیدگی کے تناظر میں فلسطینیوں کی اپنے گھروں سے بے دخلی کے اسرائیلی منصوبے کی شدید مذمت کی ہے ۔

گزشتہ رات مسجد اقصیٰ میں نماز تراویح کی ادائیگی کے بعد دمشق دورازے پر اسرائیلی پولیس کے حملے میں پچاس سے زائد فلسطینی زخمی ہوگئے ۔عالمی سطح پر اپیلوں کے باوجود تشدد کا سلسلہ جاری ہے اور مشرقی مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینی مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے اسرائیلی پولیس کی طرف سے پانی پھینکنے اور ربڑ کی گولیاں لگنے سے بارہ سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay