صرف نالوں کی باتیں ہورہی ہیں،یہ نالوں میں بہہ جائیں گے،مرادعلی شاہ

کراچی : وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے پاکستان تحریک انصاف پر  تنقید  کرتے ہوئے کہا ہےکہ  پی ٹی آئی نالہ پارٹی بن گئی ہے اور نالے میں بہہ جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ نے نیوزکانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ نالوں کی صفائی میں وفاق کی سہولت کاری کررہےہیں،میں فیکٹس میں کوئی ایک غلطی کروں تومیری نشاندہی کریں،میں نےاگرغلطی کی توتسلیم کروں گا،صرف نالوں کی باتیں ہورہی ہیں،یہ نالوں میں بہہ جائیں گے۔ ہماری ترجیحات کیاہیں؟صوبےسےپوچھ تولیں،ان کی ایک ہی ٹرمینالوجی ہےبس نالیاں اورسڑکوں کی استرکاری۔

 مرادعلی شاہ نے کہاکہ کل سندھ اسمبلی میں بجٹ پیش کروں گا،کل میں بحیثیت وزیرخزانہ بجٹ پیش کروں گا،زیادہ ٹٰیکس وفاقی حکومت جمع کرتی ہے،اگرمعیشت میں تیزی سےگروتھ ہوئی ہےتوآمدنی بھی بڑھی ہوگی۔

انہوں  نے مزید کہاکہ بطوروزیراعلیٰ میری ذمہ داری ہےکہ مسائل پربات کروں،سندھ کوبجٹ میں وفاق سےکم حصہ دیاگیا،ہمیں کہاگیاتھاکہ آپ کو742ارب روپےدیئےجائیں گے،پہلی ہی کہہ دیاکہ آپ کو62ارب نہیں ملیں گےبھول جاؤ،11ماہ میں ہمیں598ارب روپےملےہیں ۔

وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھاکہ یکم جولائی کوبتادیں گےکہ82ارب روپےمیں سےکتنےپیسےدیئے،مجھےصوبائی سیاست کرنےکاکہاگیا،وفاق کوتوسندھ کوزیادہ پیسےدینےچاہئیں،وفاقی حکومت کی گروتھ بڑھ گئی ہےتوہمیں زیادہ پیسےدیں۔

ان کا مزید کہنا  تھاکہ اگلااین ایف سی جلدسےجلددیاجائے،وسندھ کوٹیکس جمع کرنےکےمزیدمواقع دیئےجائیں،18ترمیم پرتنقیدہوتی ہے،این ایف سی پرتنقیدہوتی ہے ،صوبائی بجٹ وفاق کےفنڈزپرمنحصرہوتاہے،اکثرٹیکس وفاق کلیکٹ کرتاہے،میں فیکٹ پیش کرتاہوں توانہیں برالگتاہے۔

وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ نے کہاکہ این ایف سی ہر5سال میں ہوناہوتاہے،اس وقت ایف بی آرکےٹیکس گروتھ17فیصدہے،17فیصدگروتھ3سال کی ہے،اس پرڈھول بجارہےہیں ،ہمیں ٹیکس میں چوریاں کم کرانی چاہئیں تاکہ صوبوں کوحصہ ملے،وہ پروجیکٹ دیئےجن پرصوبائی حکومت سےمشاورت نہیں ہوئی،انہوں نےآخری مہینےمیں ہمیں144ارب روپےدینےہیں،144ارب چھوڑیں،82.5ملین میں سےہمیں کتنےدیئے؟ وفاقی حکومت سےکام نہیں ہوپارہا،فیکٹس میں اگرایک غلط بات کہوں توکہیں گےکہ غلطی کی ہے،کسی صوبےسےاختلاف نہیں،وفاق سب کوبرابردیکھے۔

کراچی سےٹھٹھہ کیرج دیئے،ہم نےپبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ بنایا،صوبےکےمسئلےبتاتاہوں تولوگ چڑکیوں جاتےہیں؟تاثردیاگیاپنجاب یاکسی صوبےسےکہہ رہےآپ پانی چوری کررہےہیں،پانی کی منصفانہ تقسیم ارساکاکام ہے۔جس طرح سوچ رہےہیں آپ ایسےصوبوں کونہیں کچل سکتے،اپنےحصےکی بات کرنےپرصوبائیت کاالزام لگایاگیا،سندھ کی بات کرنےپرمجھ پرحملہ آورکیوں ہوجاتےہیں؟

ایک صوبےنےحقیقت پرمبنی اعتراض کیایہ تاریخ کاحصہ بنےگا،وفاق صوبوں میں میگامنصوبوں کےبجائےنالوں،گٹروں پرکام کررہاہے،کیامیں نےغلط کہاکہ جامشورو روڈپریہ3سال سےلگےہوئےہیں وفاقی حکومت صوبےمیں کوئی بڑاروڈنہیں بنارہی،وفاقی70فیصداس صوبےسےکلیکٹ کرتاہے،یہ لوگ صرف لفاظی کرکےچورکہہ دیتےہیں۔

سندھ حکومت کا صرف اتوار کو کاروبار کی بندش کا اعلان

قبل ازیں سندھ حکومت کی جانب سےصرف ایک دن، اتوار کو کاروبار بند جبکہ باقی دن کاروباری سرگرمیاں جاری رکھنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

مراد علی شاہ کی زیر صدارت کورونا پر صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، جس میں ہفتے میں کاروبار کی 2 دن بندش کے بجائے ایک دن کی بندش کا فیصلہ کیا گیا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے ایکسپو سینٹر پر بغیر ویکسین سرٹیفکیٹ جاری کرنے کی خبر کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ شخص کے خلاف آئی جی اور وزارت داخلہ کو سخت کارروائی کی ہدایت دے دی۔  کورونا کے خلاف جاری کسی کام میں کرپشن یا نااہلی برداشت نہیں کریں گے۔

Junior - Taleem Aam Karaingay - Juniors ko Parhaingay