امریکہ کی جانب سے افغانستان میں جنگ بندی کا خیرمقدم

Ashraf-Ghani

امریکی وزیرِ خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ نے امید ظاہر کی ہے کہ اس سال افغان عوام عید الضحیٰ کا تہوار امن سے اور بغیر خوف کے منا سکیں گے۔

تفصیلات کے مطابق امریکہ نے افغان حکومت کی جانب طالبان کے ساتھ عید کے موقع پر کی جانے والی مشروط جنگ بندی کا خیرمقدم کیا ہے۔اس سے قبل افغانستان کے صدر اشرف غنی نے عید الاضحی سے قبل طالبان کو مشروط جنگ بندی کی پیش کش کی تھی۔

غیر ملکی فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق افغان صدر کی طرف سے یہ پیش کش تین ماہ کے لیے کی گئی ہے۔ ابلاغ عامہ کے اداروں کی جانب سے نشر کیے جانے والے اس بیان میں افغان صدر نے کہا ہے کہ ہم جنگ بندی کا اعلان کر رہے ہیں جس پر کل یوم عرفات بروز پیر سے لے کر عید میلاد النبی تک عمل کیا جائے گا۔

انھوں نے کہا کہ جنگ بندی پر عمل درآمد کا دارومدار اس بات پر ہے کہ طالبان بھی ان بابرکت دنوں میں جنگ بندی کا احترام کریں۔

صدر غنی نے کہا ہے کہ جنگ بندی ہو سکتی ہے بشرطیکہ طالبان اس کا احترام کریں۔

خیال رہے کہ صدر غنی نے طالبان سے مشروط جنگ بندی کا اعلان افغانستان کے یوم آزادی کی مناسبت سے ہونے والی ایک تقریر میں کیا۔

طالبان کی طرف سے ڈاکٹر اشرف غنی کی اس پیش کش کے بارے میں تاحال کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔

دوسری جانب امریکہ سمیت دیگر ممالک نے پاکستان نے ڈاکٹر اشرف غنی کےاس اعلان کا خیر مقدم کرتے ہوئے خوش آئند قرار دیا۔