ایشین گیمز میں ایک اور تمغہ پاکستان کے نام

جکارتہ: ایشین گیمز 2018 میں ایک اور تمغہ پاکستان کے نام قومی کھلاڑی ارشد ندیم نے جیولین تھرو میں کانسی کا میڈل جیت کر پاکستان کے لیے تیسرا تمغہ جیت لیا۔

انڈونیشیا کے شہر جکارتہ اور پالیمبینگ میں منعقد ہونے والے 18ویں ایشین گیمز میں پاکستانی کھلاڑی ارشد ندیم نے 80.75 میٹر ونیزہ پھینک کر تمغہ حاصل کیا۔ اس دوران انہوں نے چھ کو بار کوشش کی جن میں 73.52، 76.73، 72.20، 80.75، 77.56، 72.20 میٹر دور پھینکا۔

ایشین گیمز 2018  کے ایونٹ میں پاکستان کے تمغوں کی تعداد 3 ہوگئی ہے جو کہ سارے کانسی کے میڈلز ہیں۔ اس سے قبل پاکستان نے کراٹے اور کبڈی میں بھی ایک ایک کانسی کا تمغہ جیتا ہے۔

واضح رہے کہ 18ویں ایشین گیمز میں پاکستانی کھلاڑی نرگس نے تاریخ میں کراٹے ایونٹ کا پہلا تمغہ جیتا تھا۔ پاکستانی کھلاڑی نرگس کا مقابلہ نیپال کی کارکی ریتا سے ہوا تھا جو نرگس نے 1-3 سے جیتا اور 68 کلوگرام سے زائد وزن کی کیٹیگری مقابلوں میں یہ تمغہ حاصل کیا۔

اس سے قبل انڈونیشیا میں جاری ایشین گیمز کے کبڈی مقابلوں میں پاکستان کا سفر سیمی فائنل میں ختم ہوگیا تھا۔ جنوبی کوریا نے پاکستان کو 24-27 سے شکست دی تھی۔ ایشین گیمز کبڈی میں پاکستان کو شکست کے بعد کانسی کا میڈل دیا گیا تھا۔