ڈنمارک : نقاب اوڑھنے پر مسلمان خاتون پر 155امریکی ڈالرز جرمانہ عائد

Banning-Muslim-Veils

یورپی ملک ڈنمارک میں مسلم خاتون کے چہرے پر نقاب پہننے پر پرایک ہزار کرونا (155امریکی ڈالرز) جرمانہ عائد کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈنمارک میں مسلم خاتون پر نقاب اوڑھنے پر جرمانہ وائد کر دیا گیا ہے خاتون کا تعلق ترکی سے ہے اور وہ اپنا ویزا تجدید کرانے پولیس اسٹیشن گئی تھیں۔

غیرملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ڈنمارک پولیس کا کہنا ہے کہ مسلم خاتون جرمانہ اداکر کے پولیس اسٹیشن سے چلی گئیں خاتون نے ڈنمارک کے قانون سے لاعلمی کا اظہار کترتے ہوئے کہا کہ کا وہ ڈنمارک کے اس قانون سے واقف نہیں تھیں جس کے تحت عوامی مقامات پر نقاب اوڑھنا خلاف قانون ہے۔

خیال رہے کہ یورپ میں مسلمانوں سے تعصب رکھنے والے اپنی شرانگیزی سے باز نہیں آتے ، اور مسلم کمیونٹی کو تنگ کرنے کا کوئی موقعہ ہاتھ سے جانے نہیں دیتے۔ اب ڈنمارک نے بھی مسلمانوں پر اپنی زمین تنگ کرنے کی کوشش کرتے ہوئے مسلم خواتین کے حجاب پہہننے پر پابندی عائد کردی ہے۔

ڈنمارک کی پارلیمنٹ نے ماہِ مئی میں عوامی مقامات پر مسلمان خواتین کے پورے چہرے کے نقاب پر پابندی کا قانون منظور کیا تھا جس پر یکم اگست سے اطلاق ہو گیا ہے، نقاب پر پابندی کے خلاف مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرےبھی کیے گئے ہیں۔

ڈنمارک کی پارلیمنٹ میں ماہِ مئی میں عوامی مقامات پر مسلمان خواتین کے برقعہ پہننے اور ان کے حجاب کرنے پر پابندی عائد کرنے کا قانون منظور کیا گیا تھا جس پر اطلاق یکم اگست سے ہوا ہے ڈنمارک میں رہنے والے مسلم خواتین نے تعصبانہ بنیادوں پر ڈینش پارلیمنٹ کی قانون سازی کو مسترد کرتے ہوئے نئے قانون کے خلاف بھر پور انداز میں آواز بلند کی اوراپنا پرُ امن احتجاج ریکارڈ کر وایا ۔