ایون فیلڈ فیصلے کے بعد میاں صاحب سے اختلافات سامنے رکھوں گا، چوہدری نثار

ٹیکسلا: سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا ہے کہ ایون فیلڈ فیصلے کے بعد میاں صاحب سے اختلافات سامنے رکھوں گا۔

سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میں سیدھا سوچتا ہوں اور سیدھا بولتا ہوں۔ نتیجہ کیا ہوگا 25 جولائی کو پتا چل جائے گا اور پاکستان میں گورننس بہت مشکل ہے۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ میرے حلقے کے ہر کونے میں خدمت کا نشان ہے اور پاکستان میں ہر کوئی تنقید کے لیے تیار ہے۔ ابھی بہت کچھ کرنا باقی ہے، جذباتی تقار یر سے کچھ نہیں ہوگا اور اس بار 4 نشستوں سے الیکشن لڑ رہا ہوں۔

سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ وزارت چھوڑ کر اپنے حلقے پر توجہ دی ہے اور پر امید ہوں 25 جولائی کو بہت اچھے نتائج آئیں گے۔ نواز شریف کو کہا تھا مزید دشمن نہ بنائیں اور ہر قانون سازی میں ن لیگ کا ساتھ دیا ہے۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ نواز شریف سچے ہیں تو بتائیں ان کو کس بات سے دکھ ہوا ہے اور نوازشریف کی بہتری کے لیے کہا تھا اپنی مشکلات میں اضافہ نہ کریں۔

سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ ایون فیلڈ فیصلے کے بعد میاں صاحب سے اختلافات سامنے رکھوں گا اور مریم نواز بولتی پہلے ہیں سوچتی بعد میں ہیں۔ میں کبھی بکانہ کسی کا مہرہ بنا۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ جیب کے نشان پر رہی سہی کسر لندن میں پوری ہوگئی ہے اور قمر الاسلام کی گرفتاری کی سب سے پہلے میں نے مذمت کی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں نے خود جا کر نواز شریف کی صدارت کے لیے ووٹ دیا ہے۔