وزیراعلیٰ سندھ کامحرم میں ضابطہ اخلاق کومکمل طورپرنافذکرنےکاحکم

Chief-Minister-Sindh

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نےمحرم میں ضابطہ اخلاق کومکمل طورپرنافذکرنےکاحکم دے دیا ۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت امن و امان پر اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں صوبائی وزراء سعید غنی، ناصر شاہ، وزیراعلیٰ کے مشیر مرتضیٰ وہاب، چیف سیکریٹری، پرنسپل سیکریٹری، سیکریٹری داخلہ، سیکریٹری بلدیات، کمشنر کراچی، انٹیلی جنس اداروں کے سربراہان، ایڈیشنل آئی جی کراچی، ایڈیشنل آئی جی اسپیشل برانچ بھی شریک ہوئے۔

ترجمان کے مطابق اجلاس میں صوبے کے تمام ڈی آئی جیز، کمشنرز و ڈپٹی کمشنرز ویڈیوکانفرنس کے ذریعے ا شریک تھے،اجلاس میں محرم الحرام کی سیکیورٹی، مجموعی امان و امان کی صورت حال، اسٹریٹ کرائم اور ضابطہ اخلاق پر بات چیت ہوئی۔

ترجما ن کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ نے ہدایت کی ہے کہ محرم الحرام میں سڑکوں کی صفائی کویقینی بنایاجائے مساجدوامام بارگاہوں کوپانی کی فراہمی کویقینی بنایاجائے ۔

وزیراعلیٰ سندھ نےمحرم میں ضابطہ اخلاق کومکمل طورپرنافذکرنےکاحکم دیتے ہوئے سیکریٹری داخلہ کوضابطہ اخلاق سےمتعلق عوام کوآگاہ کرنےکی ہدایت کی ۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہاکہ سندھ صوفیوں کی سرزمین ہے، یہاں ہمیشہ ایک دوسرےکےخیالات کااحترام ہوتارہاہے ۔

ایڈیشنل آئی جی امیرشیخ کی اجلاس کو بریفنگ

ایڈیشنل آئی جی امیرشیخ نے اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ سندھ میں ایک ہزار996امام بارگاہ ہیں،ایک ہزار699مجالس ہوتی ہیں، تین
ہزار513ماتمی جلوس اور786تعزیہ مجالد ہوتی ہیں، کراچی میں17ہزار558اورصوبےمیں69ہزار545 فورس تعینات ہوگی،پولیس ہیڈکوارٹراورضلع وتعلقہ ہیڈکوارٹرزمیں کنٹرول روم قائم کیےجارہےہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ نے اپیل کی کے گھروں میں مجالس کی بھی پولیس سیکیورٹی فراہم کرے، عوام کےتعاون سےحکومت بہترانداز میں سیکیورٹی فراہم کرےگی گھروں پر مجالس سےمتعلق متعلقہ تھانے کومطلع کریں ۔