چینی ہیکروں نے امریکی بحریہ کا حساس ڈیٹا ہیک کرلیا، امریکا کا الزام

واشنگٹن: امریکی انتظامیہ نے الزام عائد کیا ہے کہ چینی ہیکروں نے ان کی بحریہ کے کنٹریکٹر کا حساس ڈیٹا چوری کرلیا۔

امریکی انتظامیہ کے مطابق چینی ہیکرز نے امریکی بحریہ کے کنٹریکٹر کا انتہائی حساس ڈیٹا چوری کیا جس میں زیر سمندر جنگی حرب سے متعلق معلومات بھی شامل ہیں۔

امریکی حکم کے مطابق ایف بی آئی چین کے ہیکرز کی جانب سے امریکی بحریہ کے کنٹریکٹر کا انتہائی حساس ڈیٹا چوری کیے جانے کے معاملے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے مطابق امریکی اہلکار نے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ چین کی جانب سے جس مواد تک رسائی حاصل کی گئی ہے اس میں سی ڈریگن کے نام سے موجود پراجیکٹ سمیت بحری آبدوزوں کے لیے مخصوص یونٹ کی الیکٹرانک وار فیئر لائبریری بھی ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق چینی ہیکروں نے امریکی بحریہ کے آبدوزوں اور زیر سمندر استعمال ہونے والے اسلحے پر ریسرچ کرنے والے کنٹریکٹرز کو نشانہ بنایا اور کئی اہم معلومات چوری کرلیں جس میں 2020 تک آبدوزوں میں سپر سونک اینٹی میزائل کی تنصیب سے متعلق منصوبے کی معلومات بھی شامل ہیں اور اس منصوبے کو ‘سی ڈریگن’ کا نام دیا گیا تھا۔