دنیا کو لاکھوں پناہ گزینوں کو نظرانداز نہیں کرنا چاہیے : پاپ فرانسس

 دنیا بھر میں مسیحی برادی آج  کرسمس کا تہوار منا رہی ہے۔

عیسائیوں کے مقدس مقام ویٹی کن سٹی میں کرسمس کی مرکزی تقریب ہوئی  جس سے پاپ فرانسس نے خصوصی عبادات اور دعائیں کی ۔

ویٹی کن سٹی میں کرسمس سے متعلق شب بیداری کے موقع پر شرکا سے خطاب میں پاپ فرانسس نے پناہ گزینوں کے مسئلے پر زور دیا اور کہا کہ دنیا کو لاکھوں پناہ گزینوں کو نظرانداز نہیں کرنا چاہیے ۔ پاپ فرانسس نے کہا کہ بہت سے لوگوں کو جبراً ملک سے انہی کے سربراہ نے نکالا اور انہیں معصوم لوگوں کا خون بہانے میں کوئی مسئلہ بھی نہیں ہوا۔
برطانیہ، فرانس اور جرمنی سمیت اکثر یورپی اور ایشیا کے ممالک میں شدید ترین سردی اور برف باری کے باوجود کرسمس کا جشن جاری ہے ۔

crs

 امریکہ  اور یورپ میں کرسمس کےموقع پردہشت گردی کے پیشِ نظر سیکیورٹی بھی بڑھا دی گئی ہے ۔

برطانیہ میں بھی دہشت گردی کے خطرات کے پیشِ نظر آٹھ شہر حساس قرار دیئے گئے ہیں ۔

 فرانس میں حکومت نے ایک لاکھ پولیس  اور سیکیورٹی اہلکار شہروں میں تعینات کر دیئے گئے ہیں ۔