عید الاضحیٰ اور عوام کی مصروفیات

Eid-ul-Azha

عید الاضحیٰ ایثار، قربانی ،بھائی چارےاور ایک دوسرے کے ساتھ مل بیٹھنے کا تہوار ہے اس موقع پر سنت ابراہیمی کی پیروی میں اپنے رب کی راہ میں قربانی کرتے ہیں ۔
جہاں قربانی کا مقصد اللہ کو راضی کرنا ہے تو دوسری طرف اس کا مقصد غیریبوں ،ناداروں ، بیواؤں ، یتیم اور مسکین لوگوں میں گوشت تقسیم کر نا ہے ۔

میٹھی  عید کی بہ نسبت بڑی عید پرعوام کی مصروفیات مختلف ہوتی ہیں اس عید کو مرد و خواتین تھکا دینے والی عید بھی کہتے ہیں کیونکہ اس پر قربانی سے قبل اور بعد میں بہت زیادہ کام کر نا پڑتا ہے مگر  یہ  بات بھی درست ہے کہ تھکاوٹ اور مصروفیت کے باوجودجذبہ ایمانی سے سرشار مسلمان سکون اس ہی میں پاتے ہیں۔

عید الاضحیٰ پر مرد  حضرات کی  ذمہ داریاں  اور مصروفیت  تو  جہاں  ایک ماہ  پہلے ہی  شروع ہوجاتی  وہیں  بچوں  کا  ذوق  و  شوق بھی  دیدنی ہو تا ہے ۔

 خواتین  کا  ڈپاٹمنٹ  کھانا  پکانا ہو تا ہے تو مرد حضرات کا  فرمائشیں کرنا  تو پھر  آئیں  ایک  نظر  ڈالتے ہیں  کہ  عید کے  دوسرے  روز عوام کی  کیا  مصرویات رہیں ۔

گلی  گلی محلہ محلہ  باربی کیو کی خوشبو  سے  مہک اٹھا

ملتا ن کی  عوام کی مصروفیات

اسلام  آباد  کےشہری  چٹ پٹے کھانے کھانے میں مصروف