برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادیں رکھنے والے پاکستانیوں کیخلاف کارروائی کا آغاز

FBR-HOUSE

کراچی: ایف بی آر نے برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادیں رکھنے والے پاکستانیوں کے خلاف محکمانہ کارروائی کا آغاز کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ٹیکسن ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھانے کی آخری تاریخ 31 جولائی تھی تاہم ایف بی آر نے دبئی اور برطانیہ میں جائیدادیں رکنے والے پاکستانیوں شہریوں کو نوٹس جاری کردیئے ہیں۔

ایف بی آر کے چیئرپرسن رخسانہ یاسمین کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادوں کے مالک پاکستانیوں کی معلومات حاصل کرلی ہیں، یہ معلومات برطانوی ٹیکس اتھارٹی سے لی گئی ہیں۔

واضح رہے کہ ایف بی آر کی جانب سے برطانیہ میں جائیداد رکھنے والے ایسے پاکستانی شہریوں کو نوٹس جاری کیے گئے ہیں جنہوں نے ایمنسٹی اسکیم میں ٹیکس ظاہر نہیں کیا۔

ذرائع ایف بی آر کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں مقیم 600 پاکستانیوں کو نوٹس دیے جا چکے ہیں، نوٹسز ایف بی آر کے انفارمیشن ٹیکنالوجی ونگ کی جانب سے بھجوائے گئے ہیں، جس میں برطانیہ اور دبئی میں خریدی گئی جائیدادوں سے متعلق پوچھا گیا ہے۔

ترجمان ایف بی آر کا کہنا تھا کہ ایمنسٹی اسکیم سے مجموعی طورملکی خزانے کو 110 ارب روپے کا ٹیکس حاصل ہوا جبکہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے 123 ارب روپے کی ٹیکس وصولی کا ہدف بنایا تھا۔