گوگل کروم کی 10ویں سالگرہ

جس قدر دنیا تیز رفتاری سے اپنا سفر مکمل کر رہی ہے اسکی طرح ٹیکنالوجی کی دنیا بھی برق رفتار سے آگھے بڑھتی جارہی ہے۔ 21 ویں صدی میں روز کی بنیاد پر سینکڑوں ایجادات کی جاتی ہیں۔ کچھ تجربے کامیاب جبکہ کچھ  تجربات میں مزید محنت کی ضرورت ہوتی ہے۔

اگر کوئی پروڈیکٹ لانچ کی جائے تو سب سے پہلے اسے مارکیٹ میں موجود اپنی طرح کی دیگر پروڈیکٹ سے سخت مقابلے کا سامنا ہوتا ہے بلکہ صارفین کا  دل بھی جیتنا بہت بڑا چیلنج ہوتا ہے۔ ان تمام ترحالات میں کامیابی کو یقینی بنانا انتہائی مشکل کام  ہے مگر سوال یہ ہے کہ ایسا کیا کیا جائے کے خود کو منفرد اور کامیابی بھی یقینی بنائی جاسکے۔

گوگل نے کس طرح کامیابی حاصل کی؟

یکم ستمبر 2008 کو گوگل نے کمپیوٹر صاریفین کی مشکل کو آسان بنانے کے لیے گوگل کروم متعارف کروایا۔  سندرچائی نے اس وقت ایک بلاگ پوسٹ کیا کہ گوگل کلاسک ہوم پیج کی طرح گوگل کروم بھی استعمال میں آسان اور تیز رفتار براوزر ہے۔

یہ بات محض صرف پوسٹ کی حد تک نہیں ہے بلکہ گوگل  کروم نے واضع طور پر صارفین کے دلوں میں گھر کر کیا۔ اس کی وجہ یہ کہ گوگل نے اپنے صارفین کو تیز رفتار براوزر، کلین انٹرفیس، سرچ انجن میں برق رفتاری لاتعداد آپشنز سے بھی متعارف کروایا۔

تیز رفتار براوزر

گوگل کروم نے پہلے سے موجود براوزرز جن میں انٹرنیٹ ایکسپلورر، سفاری، اور موزیلہ فائر فاکس شامل تھے۔ ان تمام براوزر  کے مقابلے میں تیز رفتار برازنگ اسپیڈ فراہم کی اور باآسانی دل چیت لیا۔

ایڈ بلاکر

 

گوگل نے اپنے نئے کروم ورژن میں ایک نیا فیچر ایڈ بلاکر کے نام سے متعارف کروایا جس نے انٹرنیٹ استعمال کرنےوالے صارفین کی پریشانی دور کردی۔ یہ فیچرغیر ضروری اشتہارات کی تشہیر کو روک کر باآسانی کام کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

ایک اندازے کے مطابق گوگل کروم دنیا میں سب سے زیادہ استعمال کیے جائے والا براوزر ہیں جو اگست 2018 تک 60 فیصد کمپیوٹرز میں صارفین کے زیراستعمال ہے۔ اگر اسمارٹ فونز کی بات کی جائے تو تقریبا 100 فیصد گوگل کروم کا ٖغلبہ ہے۔ گلوگل صارفین ایک کلیک کی دوری پر دنیا بھر کی معلومات حاصل کرسکتے ہیں۔

جو اس بات کی عکاسی کرتا ہے کہ گوگل نے اپنے صارفین کو دوسرے بروازرز کی موجودگی میں ان سے بہتر خدمات فراہم کی جس کی بدولت آج گولگل اپنی 10ویں سالگرہ منارہا ہے۔