لارڈزٹیسٹ: پاکستان نے انگلینڈ کو 9 وکٹوں سے شکست دے دی

لندن: لارڈ ٹیسٹ میں پاکستان نے 64 رنز کے آسان ہدف کو ایک وکٹ کے نقصان پر حاصل کر کے انگلینڈ کی ٹیم کو 9 وکٹوں سے شکست دے دی۔

انگلستان کی ٹیم نے لارڈز ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 235 رنز  سے چوتھے روز کے کھیل کا آغاز کیا تو  مجموعی اسکور میں 2 رنز کے اضافے کے بعد بٹلر 67 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔

انگلینڈ کی آٹھویں آؤٹ ہونے والے کھلاڑی ووڈ تھے جو 4 رنز بناکر محمد عامر کی گیند پر آؤٹ ہوئے اور ان کے بعد براڈ بغیر کوئی اسکور کیے محمد عباس کی گیند پر سرفراز کو کیچ دے بیٹھے۔

242 کے مجموعی اسکور پر ڈومینگ بیس 57 رنز بناکر آؤٹ ہوئے اور مہمان ٹیم کو جیت کے لیے 63 رنز کی برتری حاصل کی۔

پاکستان کی جانب سے محمد عامر اور محمد عباس نے 4، 4 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

میزبان ٹیم کی جانب سے مقررہ ہدف حاصل کرنے کے لیے اظہر علی اور امام الحق میدان میں اترے لیکن اوپنر اظہر علی صرف 4 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے جن کے بعد حارث سہیل میدان میں اترے ۔

اور امام الحق اور حارث سہیل کی جوڑی کی عمدہ بیٹنگ کی بدولت لارڈز ٹیسٹ میں 9 وکٹوں سے جیت پاکستان کے حصے میں آگئی۔

محمدعباس کو بہترین باؤلنگ کرنے کر مین آف دی میچ کا ایوارڈ دیا ۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ محمدآصف میرے آئیڈیل ہیں، میں ان کےجیسی باؤلنگ کی کوشش کرتاہوں۔

3 میچز پر مشتمل ٹیسٹ سیریز میں 1-0 کی برتری حاصل کرنے والی قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا میچ کے بعد بات چیت کرتے کہنا تھا کہ کامیابی پراللہ تعالیٰ کاشکراداکرتاہوں اور نوجوان ٹیم پرفخر ہے۔ انہوں نے کہا کہ بالنگ کوچ نےکھلاڑیوں پربہت محنت کی ہے جس کی بدولت بالرز نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور فیلڈنگ اچھی رہی،بہت محنت کررہےہیں۔

سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ آئرلینڈ کے خلاف کئی کیچز ڈراپ ہوئے تھے جب کہ آئرلینڈ سے میچ کھیل کرلارڈزٹیسٹ کی اچھی تیاری ہوئی۔ انکا کہنا تھا کہ بابراعظم کے متبادل کی ضرورت نہیں۔