پی پی اپنا ووٹ استعمال کرتی تو ن لیگ کی کامیابی یقینی تھی، فضل الرحمان

کوئٹہ: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ پی پی اپنا ووٹ استعمال کرتی تو ن لیگ کی کامیابی یقینی تھی۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ عوام اپوزیشن کا ایک متفقہ امیدوار چاہتی ہے اور بیشتر جماعتوں کی حمایت حاصل ہے۔ پیپلز پارٹی کو بھی ایک صدارتی امیدوار لانے پر قائل کریں گے۔

سربراہ جے یو آئی مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ آصف زرداری کو مسلسل پیغام بھیج رہا ہوں اور امید ہے آصف زرداری دوستی کے تقاضوں پر پورا اتریں گے۔ 2 امیدواروں سے اپوزیشن کو نقصان ہوگا اور میرحاصل بزنجو نے مکمل حمایت کا اعلان کیا ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے اور دھاندلی کے نتیجے میں آنے والی حکومت کو شکست دے سکتے ہیں۔ تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ رابطہ کر رہے ہیں اور سیاسی جماعتوں میں اختلافات ہوتے رہتے ہیں۔

سربراہ جے یو آئی مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کے استعفے کا مطالبہ تمام سیاسی جماعتوں کا فیصلہ ہے اور تحریک انصاف اکثریتی جماعت نہیں بلکہ بڑا گروپ ہے۔ ہم تو اسمبلی میں حلف اٹھانے کے روادار نہیں تھے اور اپوزیشن کے مشترکہ فیصلے کے بعد اسمبلی میں گئے۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ پی پی اپنا ووٹ استعمال کرتی تو ن لیگ کی کامیابی یقینی تھی اور پیپلز پارٹی کے ووٹ نہ دینے سےعمران خان کامیاب ہوئے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ملکی معیشت سنجیدگی کے ساتھ بہتر کی جاتی ہے۔