مولانافضل الرحمان کا متحدہ مجلس عمل کی صوبائی تنظیم سازی کا اعلان

اسلام آباد: متحدہ مجلس عمل کے صدر مولانا فضل الرحمن نے ایم ایم اے کی صوبائی تنظیم سازی کا اعلان کردیا۔

وفاقی دارالحکومت میں پریس کانفرنس کے دوران سربراہ جے یوآئی (ف) مولانافضل الرحمان کا کہنا تھا کہ پنجاب میں 5 ، سندھ میں 6 اپریل، بلوچستان میں 8 اور کے پی میں 10 اپریل کو ایم ایم اے کی تنظیم سازی ہوگی۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ایم ایم اے کے جھنڈے اورانتخابی نشان کتاب سے الیکشن لڑیں گے۔ یکجہتی قائم ہوچکی، اب تنظیم سازی کے مرحلے سے گزر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مختلف پارٹیوں سے سیٹ ٹوسیٹ ایڈجسمنٹ کا امکان ہے جب کہ سیاسی کارکن بندوق نہیں اٹھاتا، الیکشن لڑتا ہے۔

جے یو آئی (ف) کے سربراہ کا کہنا تھا کہ سندھ میں متحدہ مجلس عمل کوعوامی مقبولیت ملی ہے۔ پی پی کوبھی احساس ہوگیاسندھ میں جے یو آئی سے مقابلہ ہوگا۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہم بھارتی ریاستی دہشت گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کا اظہار کرتے ہیں اور شہادتوں پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہودوہنود کے گٹھ جوڑ نےمشرق ومغرب میں انسانوں کاجینا دوبھرکردیا ۔

فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ مظالم کا نوٹس لے اور مطالبہ کرتے ہیں کہ کشمیر و فلسطین میں  بے گناہ مسلمانوں کا قتل عام بند کرایا جائے ۔ چیئرمین سینیٹ کے حوالےسے وزیراعظم نے ٹھیک کہا۔ پارلیمنٹ پرلعنت بھیجنے والے آج بھی پارلیمنٹ میں موجود ہیں۔ سینیٹ کے الیکشن کوتسلیم کرتے ہیں، مگراس پراعتراضات ہیں۔

فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ رضاربانی کانام تسلیم ہوتاتوجمہوریت کامثبت چہرہ سامنےآتا ہے۔ الیکشن قریب ہے ہرجماعت اپنےمورچے میں چلی گئی ہے۔ الزام صرف خریداروں پرآرہاہےجوبک گئےان پرنہیں۔ تمام حکمران کٹہرےمیں کھڑے ہیں ، کیا یہ جمہوریت ہے۔

جے یو آئی (ف) کے سربراہ کا کہنا تھا کہ عدالتوں میں ڈھائی 2 لاکھ کیسززیرالتوا ہیں۔ الیکشن وقت پرہوں گے یا نہیں حتمی طور پر نہیں کہہ سکتا ۔ ہاتھ جوڑکرکہتاہوں، شفاف الیکشن کرائیں اورطاقتوربک سے تبدیل کرانے والوں سے جان چھڑائیں۔