سابق وزیر اعظم نواز شریف پے رول پر رہا ، شہباز شریف لندن روانہ

پنجاب حکومت نےسابق وزیر اعظم نواز شریف ان کی صاحبزادی مریم نواز اوردامادکیپٹن (ر) صفدر کی پے رول  پر رہائی کی مدت3 دن تک  بڑھانے کی منظوری دے دی ہے ۔

یاد رہے کہ پنجاب حکومت نےسابق وزیر اعظم ، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو اڈیالہ جیل سے12 گھنٹے کے لیے  پیرول پر رہاکیا تھا۔

اڈیالہ جیل سے رہائی کے بعد اُنہیں اسلام آباد ایئرپورٹ سے خصوصی طیارے کے ذریعے لاہور لے جایا گیا، جس کے بعد اُنہیں سخت سیکورٹی میں جاتی امراء پہنچادیا گیا۔

ابتدائی طور پر 12 گھنٹے کے لئے پیرول پر رہائی کی منظوری دی گئی ہے، رہائی کی مدت میں توسیع بھی کی جاسکتی ہے۔

اڈیالہ جیل سے جاتی امراء تک کے سفر کا دورانیہ پیرول کے وقت میں شامل نہیں ہے۔

پیرول پر رہائی کے دوران نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر جاتی امراء تک محدود رہیں گے انھیں صرف 3 کمروں کے علاوہ کسی اور جگہ جانے کی اجازت نہیں ہے،جاتی امراء کے اطراف بھی پولیس اہلکاروں کی بڑی تعداد تعینات کی گئی ہے۔

سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی طبیعت خراب 

خاندانی ذرائع مطابق لاہور میں اپنی رہائش گاہ پر موجود نواز شریف کی طبیعت خراب ہوگئی،ڈاکٹروں نے آرام کا  مشورہ  دے دیا  جس کے باعث وہ تعزیت کرنے والوں سےنہیں مل سکیں گے۔

شہباز شریف بھابھی کی میت لانے کیلئے لندن روانہ

 دوسری جانب مسلم لیگ ن کے صدر اور نواز شریف کے بھائی میاں شہبازشریف اپنی بھاوج بیگم کلثوم نواز کی میت لانے کے لیے لاہور سے لندن روانہ ہوگئے ہیں ،شہباز شریف کلثوم نواز کی میت لینے کیلئے آج صبح ساڑھے 9 بجےغیر ملکی پروازکے ذریعے لندن روانہ ہوئے ہیں ۔